Author Topic: Libra (Horoscope) برج میزان  (Read 1693 times)

0 Members and 1 Guest are viewing this topic.

Offline Master Mind

  • 4u
  • Administrator
  • *
  • Posts: 4468
  • Reputation: 85
  • Gender: Male
  • Hum Sab Ek Hin
    • Dilse
    • Email
Libra (Horoscope) برج میزان
« on: November 22, 2010, 04:45 AM »
میزان
بارہ برجوں کے دائرے میں برج میزان سے زیادہ رومان پسند کوئی دوسرا نہیں ہو سکتا۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ میزان ہم آہنگی، توازن اور امن و انصاف کا برج ہے۔ دائرئہ بروج میں اس کا نمبر ساتواں ہے اور علم نجوم کے قواعد کی رو سے زائچے کا ساتواں خانہ شراکت سے بھی متعلق ہے۔ اس کا نشان ”ترازو“ ہے جو عدل و انصاف اور توازن کی طرف اشارہ کرتا ہے۔ دل چسپ بات یہ ہے کہ دائرئہ بروج میں یہواحد ”بے جان“ علامت ہے شاید اسی علامت کی وجہ سے یہ لوگ اپنے جذبات و احساسات میں بھی توازن قائم رکھنے پر قادر ہوتے اور بہترین منصف بنتے ہیں۔
میزان افراد کی دل کش اور مسحور کن شخصیت دوسروں کو اپنی جانب متوجہ کرتی اور ان کے لیے باعث کشش ہوتی ہے۔ یہ بھی اپنی صلح جو طبیعت اور مصالحت پسند عادت کے سبب کسی کو مایوس نہیں کرتے اور شاید ان کا یہی رویہ دوسروں کے درمیان تنازعات کا سبب بن جاتا ہے مگر بہرحال میزانی افراد ناصرف خود کو بلکہ ہر صورت حال کو سنبھالنے کی پوری صلاحیت رکھتے ہیں۔
جنس کے معاملات میں بھی میزانیوں میں گرم جوشی اور دل چسپی نمایاںہوتی ہے۔ یہ اس حوالے سے بھی مثبت رویہ رکھتے ہیں اور نئے تجربات کی طرف بھی راغب ہو سکتے ہیں۔ یہ صورت حال اگر اعتدال سے بڑھنے لگے تو اس سے میزان کی شخصیت متاثر ہو سکتی ہے اور ان کی جائز خواہشات کو بھی غلط عنوان دیے جا سکتے ہیں۔ ایسی صورت میں ان کی ازدواجی زندگی غیرمحفوظ تصور ہوگی اور زوجین میں اختلاف خطرناک حد تک بڑھنے کے امکان کو نظرانداز نہیں کیا جا سکتا۔

میزان شخصیت
دائرة البروج میں میزان ساتویں نمبر پر ہونے کی وجہ سے شراکت اور اختلاف، یعنی دوستی اورجنگ دونوں کا مظہر ہے اور یہ ایک بڑی عجیب حقیقت ہے، جس کا تضاد قابل غور ہے۔ میزان افراد دوستی، محبت، کاروباری شراکت اور ازدواجی زندگی میں مصالحانہ رویہ رکھتے ہیں اور اپنی طرف سے کوئی تنازع پیدا نہیں ہونے دیتے۔ ان کا جارحانہ رویہ زیادہ تر مدبرانہ امور، عقل و دانش کے معاملات، عوامی بہبود کے مسائل اور دیگر بیرونی امور میں نمایاں ہوتا ہے۔
میزان افراد بہت ذہین ہوتے ہیں اور ان کی فہم و فراست بھی نمایاں ہوتی ہے۔ یہ غیرحقیقی یا مبہم نوعیت کی نہیں ہوتی۔ لوگوں سے میل جول اور انفرادی تعلقات کی انہیں ضرورت ہوتی ہے۔ ساتھ ہی ساتھ میزان افراد میں توازن کی قدر اور ہم آہنگی کی خصوصی طلب ان کے اندر ایک طرح کی بیگانگی یا لاتعلقی بھی پیدا کر دیتی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ میزانی افراد کی دوستیاں اور قربتیں بعض اوقات دیرپا اورپائیدار نہیں ہو پاتیں بلکہ بعض اوقات تو یہ لوگ ایک نکتے پر آکر اپنی پرانی رفاقت اور قریبی تعلق تک کو ختم کرتے ہوئے نہیں ہچکچاتے۔ یہ اچھے دوست تو بنا لیتے ہیں لیکن یہ کوئی مثالی تعلق نہیں ہوتا۔
میزانی افراد دوسروں سے تعلقات اور باہمی رابطے میں بہت کامیاب رہتے ہیں، کیوں کہ یہ بہت باتدبیر، موقع شناس، متاثرکن اور مصلحت اندیش ہوتے ہیں۔ بعض اوقات یہ ہوشیار اور فطین ہونے کے ساتھ کسی حد تک خودغرض بھی ہو سکتے ہیں۔ طبیعتاً یہ لوگ کسی کو صاف انکار نہیں کر سکتے۔ ایسے افراد کو ہچکچاہٹ یا پس و پیش کی عادت پر قابو پاکر زیادہ مثبت اور واضح انداز اختیار کرنا چاہیے تاکہ آئندہ کی تکلیف دہ اور ناپسندیدہ صورت حال سے محفوظ رہ سکیں۔
برج میزان کے زیراثر افراد میں کسی معاملے میں تنہا فیصلہ کرنے کی قوت کم ہوتی ہے اور یہ پے چیدہ معاملات سے نبردآزما ہونے میں بڑی دقت محسوس کرتے ہیں۔ کہا جا سکتا ہے کہ ان میں دنیا کا مقابلہ کرنے کی ہمت نہیں ہوتی۔ یہ لوگ دوسروں کی خاطر اور خواہش کے لیے بہت کچھ کرنے کو تیار ہو جاتے ہیں۔ یہ چیز ان لوگوں کی سادہ لوحی کی نشان دہی کرتی ہے۔ کبھی کبھی یہ عادت خوشامد پسندی یا خودپسندی کی وجہ سے بھی ہو سکتی ہے۔ خودپسندی اور اپنی تعریف کی خواہش بھی ان کی شخصیت کا حصہ ہے اور اس کے ساتھ ساتھ صنف مخالف کی طرف جھکاﺅ بھی ان میں پایا جاتا ہے۔

میزان کا عشرہ اوّل
دائرة البروج میںہر برج کو دس دس درجے کے تین حصوں میں تقسیم کیا گیا ہے۔ ہر حصہ ایک عشرہ کہلاتا ہے اور دوسرے عشروں سے مختلف اثر ظاہر کرتا ہے۔ اس اثر کا مطالعہ آپ کی شخصیت کے مزید راز کھولتا ہے۔
برج میزان کے عشرئہ اوّل کا ذیلی حاکم سیارہ بھی زہرہ ہے، یعنی آپ اپنے سیارے کے بھرپور اثرات کے مالک ہیں۔ آپ کے نزدیک خوب صورتی اور ہم آہنگی ہی سب سے اہم چیزیں ہیں۔ امن پسندی اور دوستی آپ کا طرئہ امتیاز ہے۔ محبت کو آپ بہت اہمیت دیتے ہیں۔ دوسروںکو متاثر کرنے کی شدید خواہش آپ کے دل میں رہتی ہے اور اگر موافق حالات میسر آئیں تو اس کام میں بہت کامیابی حاصل کر سکتے ہیں۔ اس عشرے پر سیارہ زہرہ کے دہرے اثر کی وجہ سے آپ ایک بہترین میزانی کہلانے کے حق دار ہیں۔ آپ صاحب بصیرت، متوازن اور فن کارانہ شخصیت کے حامل ہیں۔ زندگی کے مسائل کا غیرجذباتی طور پر تجزیہ کرنے کی خوبی رکھتے ہیں لیکن آپ کو تعریف و توصیف کی حوصلہ افزائی کی ضرورت ہوتی ہے، ورنہ آپ کا نازک دل ٹوٹ بھی سکتا ہے۔

میزان کا عشرہ دوم
اگر آپ کی تاریخ پیدائش 4 اکتوبر سے 13 اکتوبر تک ہے تو آپ برج میزان کے دوسرے عشرے سے تعلق رکھتے ہیں۔ آپ کا ذیلی حاکم سیارہ یورینس ہے۔ یہ اضافی خصوصیت ایسی ہے جو آپ کی شخصیت میں استحکام اور مقناطیسی قوت پیدا کرتی ہے۔ آپ ایک ایسے میزانی ہیں جس کے بارے میں پہلے سے کچھ کہنا، دوسروں کے لیے مشکل ہوگا۔ آپ غیرمعمولی صلاحیتوں کے مالک اور جدت طراز ہیں۔ اپنی اس خوبی کی وجہ سے آپ بہت جلد ترقی کی منازل طے کر سکتے ہیں

میزان کا عشرہ سوم
اگر آپ 14 اکتوبر سے 23 اکتوبر تک پیدا ہوتے ہیں تو آپ کا ذیلی سیارہ عطارد ہے۔ اس کے اضافی اثرات کی وجہ سے آپ ایسے میزانی ہیں جو دوسروں کو قائل کرنے کی بے پناہ صلاحیت رکھتے ہیں۔ آپ کے اندر تحریر و تقریر کی قدرتی صلاحیت موجود ہے۔ نشر و اشاعت اور تشہیری شعبے سے آپ کو خصوصی لگاﺅ ہو سکتا ہے اور اس شعبے میں آپ نمایاں مقام حاصل کر سکتے ہیں لیکن آپ کو اپنی بھرپور صلاحیتوں سے فائدہ اٹھانے کے لیے تھوڑی سی مستقل مزاجی، ذرا سی سختی اور مقصدیت پر ارتکاز توجہ کی ضرورت ہوگی۔ عطاردی اثرات بے پروائی، غیرمستقل مزاجی اور ذہنی انتشار بھی لاتے ہیں۔
میزان بچہ

میزان بچے بڑے سرگرم اور پُرجوش ہوتے ہیں لیکن ان کے موڈ بدلتے رہتے ہیں۔ وہ ابھی خوش و خرم نظر آرہے ہوں گے مگر اچانک بہ ظاہر بلا کسی وجہ کے اداس و غمگین ہو سکتے ہیں۔ ان کی سب سے بڑی خرابی زودرنجی اور غیرمستقل مزاجی ہے۔ وہ کوئی کام ثابت قدمی کے ساتھ نہیں کرتے۔ ان کی دل چسپیاں بدلتی رہتی ہیں۔ قوت فیصلہ کی کم زوری کی وجہ سے بروقت فیصلے میں دشواری محسوس کرتے ہیں۔ والدین کو اس حوالے سے ان کی مدد کرنی چاہیے۔ یہ بچے آرٹ اور موسیقی کے دل دادہ ہوتے ہیں۔ تعلیمی مصروفیت کے ساتھ ان کے لیے ذہنی تفریح بھی ضروری ہے، ورنہ ان کے اعصاب پر برا اثر پڑ سکتا ہے۔
میزانی توازن پسندی اور ہم آہنگی کا جذبہ نامناسب ماحول میں رقابت اور عدم اطمینان کی کیفیت پیدا کر سکتا ہے جس کی وجہ سے اعصابی و نفسیاتی مسائل جنم لے سکتے ہیں۔ ان بچوں کو دردسر، دردکمر اور نظام ہضم کی خرابیوں سے واسطہ پڑ سکتا ہے۔ جگر، گردہ اور مثانے کے امراض پریشان کر سکتے ہیں، لہٰذا ان حوالوں سے ان کی دیکھ بھال ضروری ہے۔
میزان شوہر

میزان شوہر ایک جذباتی مرد ہوتا ہے جس کے نزدیک محبت ایک اعلیٰ درجے کا آرٹ ہے۔ اس کے جذبات ہمہ گیر ہوتے ہیں اور وہ ان کے اظہار میں بلندیوں تک پہنچ جاتا ہے۔ اس قسم کے مرد کو اپنے جذبات کا آسودگی بخش جواب نہ ملے تو وہ بڑا مایوس ہو جاتا ہے اور اگر اس کی شریک حیات بہت زیادہ قابل قبول بھی نہ ہو تو اس میں دیگر عورتوں سے رابطے کا رجحان پیدا ہوسکتا ہے۔ میزان شوہر اس وقت تک مکمل علیحدگی کے بارے میں نہیں سوچتا جب تک اس کی پُرامن و پُرسکون زندگی کو شدید نوعیت کے تنازعات سے جہنم نہ بنا دیا جائے۔وہ وجدانی طور پر غیروں اور ناتجربہ کار لوگوں پر اعتماد نہیں کرتا۔ وہ اپنی نازک مزاجی کی تسکین کے لیے اپنی منصفانہ خصوصیات سے گھریلو امور میں رہنمائی کرتا ہے۔
میزان شوہر کو آسانی سے خوش نہیں رکھا جا سکتا۔ وہ یکسانیت سے جلد بے زار ہو جاتا ہے لیکن روایات اور دوسروں کے جذبات کا احترام کرنے والا شخص ہوتا ہے۔ معقولیت پسندی، انصاف اور نظم و ضبط اس کی نمایاں خصوصیات ہیں۔ گھر اور اہل خانہ کی رہنمائی کے لیے اس کی اعلیٰ صلاحیتیں اس کا سب سے بڑا سرمایہ ہوتی ہیں۔ منفی کردار کے حامل میزانی افراد میں یہ صلاحیت نہیں پائی جاتی۔ یہ وہ میزانی ہوتے ہیں جن کا پیدائش کے وقت حاکم سیارہ زہرہ کم زور پوزیشن رکھتا ہو۔
میزان شوہر اپنے اہل خانہ کے کھانے پینے اور دیگر ضروریات زندگی کا بڑا خیال رکھتے ہیں اور وہبھی میزان خواتین کی طرح اپنے گھر کو صاف ستھرا اور عیش و آرام کی قیمتی اشیا سے آراستہ دیکھنے کے خواہش مند ہوتے ہیں۔

میزان بیوی


سیارہ زہرہ کو حسن و عشق کی دیوی کہا جاتا ہے، پھر یہ کیسے ممکن ہے کہ میزان بیوی اپنے حاکم سیارے کی اہم خصوصیت کا مظہر نہ ہو۔ وہ سیارہ زہرہ کے زیراثر مکمل نسوانیت، محبت اور دل موہ لینے والی کشش کی حامل ہوتی ہے۔ نازک و آرٹسٹک مزاج اور رومان پسند میزان بیوی شراکتی معاملات میں بڑی ذہانت و سمجھ داری کا عملی مظاہرہ کرتی ہے۔ اس کی سب سے بڑی خوبی ہم آہنگی پیدا کرنے کیصلاحیت ہے۔ شوہر سے اور دیگر اہل خانہ سے اس ہم آہنگی کی خاطر وہ اپنے مزاج اورپسند کے خلاف سمجھوتے بھی کر لیتی ہے تاکہ گھریلو ماحول میں کوئی عدم توازن پیدا نہ ہو۔ وہ اپنی گھریلو خوشیوں کا بے حد خیال رکھتی ہے اور انہیں برقرار رکھنے کے لیے کسی محنت، جدوجہد اور قربانی سے دریغ نہیں کرتی۔ ایسے رفیق حیات کی خواہش کرتی ہے جو اس سے عقیدت کی حد تک محبت کرتا ہو اور اس کے عزیز و اقارب سے بدظن نہ ہویا ان کے لیے کسی تنگ دلی کا مظاہرہ نہ کرتا ہو۔
میزان بیوی ایسے رفیق حیات کو پسند کرتی ہے جو اس کی خامیوں اور محرومیوں کو دور کردے۔ اگر وہ خود غریب گھرانے سے تعلق رکھتی ہو تو ایک دولت مند گھرانے کا شوہر اس کی ترجیحات میں شامل ہوگا۔ اگر وہ خود تعلیم کے میدان میں پیچھے رہ گئی ہو تو اعلیٰ تعلیم یافتہ شوہر کی خواہش کرے گی۔ الغرض اپنی کم زوریوں کا متبادل اسے شوہر کی صورت میں درکار ہوتا ہے۔ اس میں جبر، دباﺅ اور حالات کی سختی برداشت کرنے کے لیے بھی بڑا حوصلہ اور ہمت ہوتی ہے۔

میزان باپ
بحیثیت باپ میزان افراد نہایت کھلے دل کے مالک اور سخی ہوتے ہیں۔ ان کی ناراضی کو دور کرنا زیادہ مشکل نہیں ہوتا۔ یہ اپنے بچوں کے لیے بڑے مہربان و شفیق ہوتے ہیں اور بعض اوقات بچے ان کی اس کم زوری سے ناجائز فائدہ اٹھاتے ہیں۔ انہیں چاہیے کہ اپنے بچوں کو اتنی زیادہ ڈھیل نہ دیں کہ وہ ان پر حاوی ہو جائیں۔ ویسے ان میں اپنے اور اپنے بچوں کے حقوق کی خاطر ہر طرح کا مقابلہ کرنے کی صلاحیت اور جذبہ ہوتا ہے۔
میزان ماں

میزان خواتین میں اپنے بچوں کے اندر نرم دلی کے جذبات پیدا کرنے کا جذبہ زیادہ ہی ہوتا ہے۔ وہ اپنے بچوں کے کردار کی بلندی اور اعلیٰ جذبات پیدا کرنے کی خاطر انہیں ہر ممکن سہولت اور مدد فراہم کرتی ہیں لیکن ساتھ ہی ساتھ ان کے اندر نظم و ضبط پید اکرنے کے لیے سختی تک سے باز نہیں رہتیں۔ وہ اپنے گھر میں ہم آہنگی کی خاطر ہر لمحہ مصروف رہتی ہیں اور ان کی صرف ایک نگاہ ہی حالات کو سدھارنے کے لیے کافی ہوتی ہے۔ یہ اپنے گھر اور خاندان میں سکون اور یگانگت قائم رکھنے میںکامیاب رہتی ہیں۔

میزان دوست
یہ لوگ عموماً دوسروں سے الگ تھلگ رہنا پسند کرتے ہیں لیکن اسے ان کی سردمہری نہیں کہا جا سکتا۔ یہ بڑے خوش اخلاق اور ملنسار ہوتے ہیں۔ ان کی صحبت و رفاقت بہت دل چسپ ہوتی ہے مگر ان کی توازن پسندی دوسروں سے تعلقات میں بھی ایک حد مقرر کرتی اور انہیں زیادہ گھلنے ملنے سے روکتی ہے یا یہ کہا جائے تو غلط نہ ہوگا کہ یہ غیرضروری طو رپر دوسروں کے معاملات میں دل چسپی اور دخل اندازی سے گریز کرتے ہیں۔ ان کی نصیحت اور مشورے بہت معقول اور مفید ہوتے ہیں۔ ان لوگوں میں ایک خاص قسم کی نفاست اور عمدگی پائی جاتی ہے جس سے انسانی رشتوں اور تعلقات میں بھی ایک اچھی اور رواں لہر پیدا ہوتی ہے۔
« Last Edit: March 19, 2013, 05:16 AM by Master Mind »

Offline Master Mind

  • 4u
  • Administrator
  • *
  • Posts: 4468
  • Reputation: 85
  • Gender: Male
  • Hum Sab Ek Hin
    • Dilse
    • Email
Re: Libra (Horoscope) برج میزان
« Reply #1 on: March 19, 2013, 05:18 AM »


ملازم

میزان افراد عام طور پر اپنی پسند یا خواہش کے مقام تک ملازمت میں مشکل ہی سے پہنچتے ہیں۔ملازمت کے دوران عائد ہونے والی حدود و قیود ان کے لیے تکلیف دہ اور پریشان کن ہوتی ہیں، پھر بھی یہ خود کو ایک اچھا ملازم ثابت کرنے کی کوشش کرتے رہتے ہیں اور اپنے فرائض ذمے داری کے ساتھ ادا کرتے ہیں لیکن بنیادی طور پر میزان افراد تنہا کوئی کام کرنے کے بجائے دوسروں کے ساتھ مل کر کام کرنا زیادہ پسند کرتے ہیں بلکہ اس طرح بہت عمدہ طریقے سے اپنی صلاحیتوں کا اظہار کرتے ہیں۔ میزان افراد جسمانی مشقت کے سخت کاموں سے کتراتے اور ایک نسبتاً سہل زندگی پسند کرتے ہیں

میزان کے تعلقات

دائرئہ بروج میں ساتویں درمیانی گھر میں واقع ہونے کی وجہ سے میزان کو شادی اور شراکت کا برج کہا جاتا ہے لیکن اس کا یہ مطلب ہرگز نہیں کہ میزانی افراد کو شادی سے خصوصی دل چسپی ہوتی ہے۔ شادی ان کے لیے خوشی کا باعث ضرور ہوتی ہے مگر باہمی ہم آہنگی نہ ہو تو یہ اس تعلق سے بھی راہ فرار کے بارے میں سوچنے لگتے ہیں۔ ان سے تعلقاتی شراکت کوئی آسان کام نہیں ہے، کیوں کہ یہ محبت جیسے معاملے میں بھی ہاتھ میں ترازو تھامے بیٹھے ہوتے ہیں اور اس ناپ تول میں مصروف رہتے ہیں کہ جتنی محبت وہ کسی سے کر رہے ہیں، اتنی انہیں جواباً مل رہی ہے یا نہیں؟ یہ خصوصیت مرد اور خواتین دونوں میں پائی جاتی ہیں۔
یہ کہنا تو کچھ درست نہیں کہ میزان ایک پیار کرنے والا برج ہے بلکہ حقیقت یہ ہے کہ میزان افراد کے طور طریقے بڑے پیارے ہوتے ہیں، جن کی تہ میں کہیں نہ کہیں کوئی مفاد یا غرض پوشیدہ ہوتی ہے۔ میزان خواتین بہترین مہمان نواز ہوتی ہیں لیکن اپنی اعلیٰ صلاحیتوں کا اظہار کرنے کے لیے انہیںبہت سے ملازمین کی ضرورت ہوتی ہے، کیوں کہ وہ جسمانی مشقت کے کام کرنا پسند نہیں کرتیں۔ وہ اپنی ذہنی اور تخلیقی صلاحیتوں سے دوسروں کو متاثر کرتی ہیں۔ میزان مرد سے بھی محنت طلب کاموں کی توقع نہ رکھیں۔

میزان اور حمل کا ساتھ


میزان ہوا اور حمل آگ ہے۔ ہوا آگ کے لیے مددگار ہے۔ علم نجوم کے قواعد کے مطابق حمل پہلا اور میزان اس کے مقابل ساتواں برج ہے۔ حمل ابتدا یا پہل کرنے والا، بے چین و پُرجوش، باعمل، باصلاحیت، تجسس پسند، باہمت و بے خوف ساتھی ہے۔ میزان کے ساتھ اس کی جوڑی بڑی معنی خیز اور شان دار رہتی ہے۔ خصوصاً شراکتی عمل میں عمدہ توازن کے ساتھ بہترین پیش قدمی ہوتی ہے اور یوں دونوں مل کر زندگی میںنمایاں کامیابیاں حاصل کرتے ہیں۔ اس تعلق سے دونوں خوش رہتے ہیں۔

مینڈھے کے نشان والا حمل فرد میزان کی ذہانت، دل کشی اور ہم آہنگی(میل جول کی فطرت) کو بہت پسند کرتا ہے۔ اس کے لیے میزان کی محبت بھری مسکراہٹ اور ہم دردی کے بول نظرانداز کرنا بہت ہی مشکل ہوتا ہے۔ حمل کی متجسس فطرت اس کو دوسروں کا تعاقب کرنے پر اُکساتی ہے اور میزان کسی کو خود سے متاثر ہوتا دیکھ کر بہت خوش ہوتا ہے۔ ان وجوہات کی بنا پر یہ ایک دوسرے کے قریب آجاتے ہیں اور اس طرح ان کی جوڑی کامیاب رہتی ہے۔

اس تعلق میں حمل کی غلبہ پسند طبیعت کبھی کبھی میزان کے مزاج پر گراں گزرتی ہے اور ترازو کا توازن بگڑنے لگتا ہے۔ ایسی صورت میں کسی بڑے تصادم کا امکان ہو سکتا ہے۔ چناں چہ حمل فرد کو میزان کی پُرسکون فطرت، توازن پسندی کی عادت اور نفاست کو پوری طرح سمجھنے کی صلاحیت پیدا کرنی ہوگی اور میزان کو بھی اس حقیقت کو قبول کرنا ہوگا کہ حمل کو کسی خاص طرز زندگی یا برتاﺅ پر مجبور نہیں کیا جا سکتا، لہٰذا اپنے شریک کار یا شریک حیات کے آزادانہ طرزعمل کی قدر کرے، تب ہی یہ جوڑی ہمیشہخوش و خرم رہ سکتی ہے۔

میزان اور ثور کا ساتھ


میزان کے عنصر ہوا سے برج ثور کاعنصر خاک(مٹی) موافقت نہیں رکھتا۔ علم نجوم کے قواعد کے مطابق بھی دونوں میں دوستی ہے نہ دشمنی، لیکن دونوں بروج کا حاکم سیارہ ایک ہی ہے، یعنی زہرہ۔

ثور فرد اپنی شخصیت میں نرم دل، عملیت پسند، مادہ پرست، محتاط فن کارانہ صلاحیتوں کا حامل، تخلیق کار، خودبین، خودپسند، قابل اعتماد، صابر اور ضدی ہوتا ہے۔ اس کی منفی خصوصیات میں ہٹ دھرمی، قابضانہ فطرت، اکھڑپن اور تنگ نظری شامل ہیں۔

میزان اور ثور کا اتحاد و مختلف انداز فکر و طرزعمل رکھنے والوں کا اتحاد ہوگا۔ دونوں کا حاکم سیارہ اگرچہ زہرہ ہے اور دونوں کو زندگی کے حسن و خوب صورتی سے پیار ہوتا ہے مگر ان دونوں کی ذہنی کیفیات یا ان کے ذہنی اُفق میں بڑا فرق ہوتا ہے اور اگر حالات ذرا بھی ناموافق ہوں تو ان کے درمیان بہت سی خرابیاں اور نااتفاقیاں جنم لے سکتی ہیں۔ ثور کے طرز زندگی میں ایک سست روی سی پائی جاتی ہے یا یوں کہنا چاہیے کہ اسے کسی بات کی جلدی نہیں ہوتی۔ یہ انداز زندگی میزان کی طبیعت و مزاج کے خلاف ہے۔ ثور فرد حالات کی یکسانیت سے بور نہیں ہوتا بلکہ حالات میں استحکام کا قائل ہوتا ہے۔ اس کے برعکس میزان ہر لمحہ معاملات کے مثبت و منفی پہلوﺅں پر غور و خوض کرتا ہے اور ان کی گہرائی تک جانے کا جذبہ رکھتا ہے، خواہ یہ پہلو اور معاملات کتنے ہی غیراہم کیوں نہ ہوں۔ اسی طرح میزان فرد کے لیے کسی بھی مباحثے میں جیت بہت اہمیت رکھتی ہے۔ ثور فرد اپنے میزان رفیق کی ہر معاملے میں باریک بینی اور سوچ بچار کی عادت سے بعض اوقات تنگ آجاتا ہے اوریوں کسی اختلاف اور کھنچاﺅ کی صورت پیدا ہو جاتی ہے۔ میزان افراد کسی بھی معاملے میں فوری طو رپر فیصلہ کرتے ہوئے ہچکچاتے ہیں اور ثور افراد بحث و مباحثہ پسند کرتے ہیں۔ دونوں کے مزاجوں کے یہ اختلافات اس جوڑی کو بہت کامیاب ثابت نہیں کرتے۔

میزان اور جوزا کا ساتھ


دونوں کا عنصر ہوا اور علم نجوم کے قواعد کی رو سے باہم دوست ہیں، اس لیے دونوں کا باہمی تعلق ایک شان دار کامیاب جوڑی بناتا ہے۔

جوزا شخصیت ذہنی طور پر نہایت چاق و چوبند اور تجسس پسند ہوتی ہے۔ یہ فن کارانہ طبیعت کے حامل، بے چین، غیرمستقل مزاج، حاضر جواب، شوخ و پُرمزاح اور ہمہ گیر لوگ ہوتے ہیں۔ ان کی منفی خصوصیات میں تذبذب، بے ترتیبی، بے سلیقگی، خودپرستی، بے پروائی اور ڈھلمل یقین ہونا شامل ہے۔

میزان کے ساتھ جوزا کا رشتہ بہت عمدہ رہتا ہے۔ جوزا کی مستقل سرگرمی و پُرجوشی، میزان کی دل کشی اور مسحورکن شخصیت کے ساتھ مل کر بہت شان دار اتحاد بناتی ہے۔ میزان کی طرف سے جوزا کو وہ ذہنی مقابلہ آرائی حاصل ہو جاتی ہے جس کی اسے اشد ضرورت ہوتی ہے۔ میزان میں وہ مصلحت اندیشی بھی بھرپور طور پر ہوتی ہے جس کی مدد سے وہ جوزا کے اضطراب اور تلون پر قابو رکھ سکے۔ جوزا افراد میزان کے منصوبوں اور مقاصد کے لیے کام کرنے میں بڑی سہولت اور تسکین محسوس کرتے ہیں، لہٰذا یہ ایک بڑی پُرجلال جوڑی نظر آتی ہے۔

میزان اور سرطان کا ساتھ


سرطان کا عنصر پانی ہے، جس کا میزان کے عنصر سے موافقت و ناموافقت کا کوئی رشتہ نہیں۔ علم نجوم کے قواعد کے مطابق بھی دونوں بروج مخالف زاویہ رکھتے ہیں۔ سرطان افراد حساس اور ہم درد، میانہروی و احتیاط پسندی کے قائل اور من موجی ہوتے ہیں۔ ان کی شخصیت کے مثبت پہلوﺅں میں متلون مزاج، نمایاں احساس کم تری، پس و پیش کرنے کی عادت، جلد دل برداشتہ و مایوس ہونا شامل ہے۔

میزان اور سرطان کی جوڑی اچھی ہے مگر بہت تھوڑے عرصے کے لیے۔ ترازو اور کیکڑا ایک مختصر مدت تک تو باہمی طور سے اچھا وقت گزار سکتے ہیں لیکن ان دونوں کی بنیادی خصوصیات اس قدر مختلف ہیں کہ زندگی کا خوش گوار انداز زیادہ عرصے تک جاری نہیں رہ سکتا اور یہ بنیادی یا لازمی اختلافات بھی متعدد ہیں، البتہ اگر دونوں ایک دوسرے سے سیکھنے اور ایک دوسرے کو برداشت کرنے کی صلاحیت پیدا کرلیں تو یہ جوڑی کامیاب ثابت ہو سکتی ہے۔ نظریاتی طور پر ان کے درمیان دولت کے معاملے میں بھی اختلاف ہوتا ہے۔ سرطان کو دولت جمع کرنے کا شوق ہوتا ہے جب کہ میزان کو اس سے کوئی خصوصی دل چسپی نہیں ہوتی۔ میزان کو بہت زیادہ میل جول اور تقریبات میں شرکت کی بہتات بیمار کر سکتی ہے جب کہ سرطان کی یاسیت پسندی بیماریوں کا سبب بنتی ہے۔ میزان کا رجحان دلیل اور منطقی انداز کی طرف ہوتا ہے جب کہ سرطان سراسر احساس و جذبات میں گھرا رہتا ہے اور یہ خصوصیت بھی پوشیدہ ہوتی ہے۔ ان حالات میں بھی اگر یہ دونوں ایک دوسرے کے ساتھ گزارا کر سکیں تو ان کی جوڑی یقینا بڑی دل چسپ ہو سکتی ہے۔

میزان اور اسد کا ساتھ


میزان ہوا اور اسد آگ ہے۔ عناصر کے اعتبار سے دونوں میں موافقت اور علم نجوم کے قواعد کی رو سے بھی ہم آہنگی اور دو ستی ہے۔ برج اسد، میزان سے گیارہویں نمبر پر ہے جب کہ میزان، برج اسد سے تیسرے نمبر پر۔ زائچہ نجوم میں گیارہواں خانہ امید و خواہشات سے متعلق ہوتا ہے اور تیسرا علم و ذہنی سرگرمیوں کے لیے مخصوص ہے۔ اس طرح میزان کی امید و خواہشات برج اسد سے وابستہ ہیں اور اسد کی ذہنی دل چسپی کا باعث برج میزان ہے۔

میزان اور اسد کی جوڑی بہت لاجواب ہے۔ یہ دونوں مل کر انتہائی بلندیوں تک پہنچ سکتے ہیں اور دونوں مطمئن و کامیاب رہ سکتے ہیں۔ دونوں ایک پُرجوش و سرگرم زندگی گزار سکتے ہیں۔ میزان کو جس استحکام کی ضرور ہوتی ہے، اسد اس کا ذریعہ بن سکتا ہے۔ وہ اس کے اندر محبت اور دوستانہ طور طریقوں کو بہت پسند کرتا ہے۔ کبھی کبھی اگر اسد ضرورت سے زیادہ حاکمانہ طرز عمل اپنائے تو یہ چیز میزان کو بددل اور مایوس کرسکتی ہے مگر وہ اس کا اظہار نہیں کرتا اور اپنی مصالحانہ فطرت سے کام لے کر صورت حال کو خوش گوار بنا لیتا ہے۔

حسن و خوب صورتی میزان اور اسد دونوں کو پسند ہے اور وہ انہیں اپنانا چاہتے ہیں۔ دونوں ہی جذباتی اور پُرامید ہوتے ہیں۔ا سد کو بھی محبت اور اظہار پسندیدگی کی اتنی ہی خواہش ہوتی ہے جتنی میزان کو۔ اگر یہ چیز دونوں ایک دوسرے کو فراہم کرتے رہیں تو معاملات بہت ہی شان دار طریقے پر چل سکتے ہیں، ورنہ اختلاف کا امکان ہے۔

میزان اور سنبلہ کا ساتھ


ہوا اور مٹی کا ساتھ۔ دونوں میں عناصر کے اعتبار سے تضاد موجود ہے۔ خاک کا غلبہ ہوا کو دھندلا کر دیتا ہے اور ہوا کا زور مٹی کو منتشر۔ علم نجوم میں یہ دونوں باہم جڑے ہوئے برج، یعنی آگے پیچھے، آپس میںدوستی رکھتے ہیں نہ دشمنی۔ ان کے درمیان اس قربت کے باوجود ایک لاتعلقی کا رشتہ ہے۔ میزان سنبلہ سے دوسرا اور سنبلہ میزان سے بارہواں برج ہے۔ دوسرا خانہ زائچے میں خانہ مال و آمدن اور مالی خوش بختی سے متعلق ہے جب کہ بارہواں خانہ اخراجات و نقصانات اور خفیہ سرگرمیاں و دشمنی ظاہر کرتا ہے اور اس طرح یہ جوڑی بہت دل چسپ ہو جاتی ہے۔ میزان، سنبلہ کے لیے ذریعہ مفادات ہو سکتا ہے مگر سنبلہ، میزان کے لیے نقصان دہ ثابت ہو سکتا ہے۔

میزان اور سنبلہ کی جوڑی اس تناظر میں بہت اچھی اور کامیاب نہیں ہو سکتی۔ میزان افراد عموماً بڑی دوستانہ طبیعت رکھتے ہیں۔ زندگی کے خوش گوار پہلوﺅں اور خوش کن باتوں پر ان کی نظر رہتی ہے۔ اگر ذرا سا خیال رکھا جائے تو دونوں کی جوڑی بڑی خوب صورت اور دل چسپ بن سکتی ہے۔ اس کے لیے میزان کو سنبلہ کی صفائی پسندی، نفاست اور ہر معاملے میں رکھ رکھاﺅ کی عادت کا خیال رکھنا ہوگا اور سنبلہ کی عادت و مزاج کو مدنظر رکھ کر تھوڑا سا خود کو بدلنا ہوگا۔ اس طرح میزان کی سستی اور قوت فیصلہ کی کمی کا مسئلہ سنبلہ کی بھرپور شراکت سے حل ہوجائے گا۔ سنبلہ کو بھی اعتراضات و نکتہ چینی کی شدت پر قابو پانا ہوگا اور میزان کی دل جوئی کے لیے جذبات کے کھلے اظہار کا رویہ اپنانا ہوگا تب ہی ان کی زندگی خوش گوار گزر سکتی ہے۔

میزان اور میزان کا ساتھ


میزانی افراد اپنے علامتی نشان ”ترازو“ کی مناسبت سے ہر وقت جانچ پڑتال کے عمل میں ذہنی طور پر مصروف رہتے ہیں تاکہ کسی درست فیصلے تک پہنچ سکیں لیکن عموماً ایسا ہوتا نہیں۔ وہ اپنے تصورات کی عدالت میں کبھی منصف ہوتے ہیں اور کبھی ملزم۔ جب وہ بے حد غور و خوض کے بعد بھی کوئی فیصلہ نہیں کر پاتے تو اس معاملے کو کسی اور مناسب وقت کے لیے اٹھا کر رکھ دیتے ہیں۔ کسی فیصلے میں دشواری کی وجہ شاید یہ ہوتی ہے کہ یہ لوگ انصاف اور اصول پسندی کے قائل ہوتے ہیں۔ اب آپ دو ایک جیسے افراد کو اکٹھا کر دیجیے جو انصاف پسندی، حسن و خوب صورتی، ہم آہنگی، موسیقی و آرٹ اور رنگوں کے یکساں دل دادہ ہوں۔ ان دونوں کی محبت خوب پھلے پھولے گی۔ جو امنگ و جذبہ ان میں نظر آئے گا، وہ کسی اور جوڑے میں نہیں ہوگا لیکن جب محبت کی امنگوں اور رنگوں کا زور ٹوٹے گا تو انہیں سوائے خاموشی، سکون اور تنہائی کے کچھ اچھا نہیں لگے گا۔ بعض اوقات تو یوں محسوس ہوگا کہ یہ دونوں ایک دوسرے کی ضد ہیں۔ ایک اوپر کہیں بلندی پر تو دوسرا کسی پستی کی جانب گامزن ہے مگر ایسا ہمیشہ نہیں ہوتا۔ اگر یہ صورت زیادہ نہ ہو تو ان کی جوڑی سے بہتر جوڑی ملنا شاید مشکل ہو۔

میزان اور عقرب کا ساتھ
میزان اور عقرب دائرئہ بروج میں آگے پیچھے ہیں، یعنی میزان ساتویں اور عقرب آٹھویں نمبر پر۔ میزان کا عنصر ہوا اور عقرب کا پانی ہے۔ ہوا اور پانی میں کوئی جوڑ نہیں۔ علم نجوم کے قواعد میں یہ ”تحویلی بروج“ ہیں۔عقرب نہایت حساس اور روح کی گہرائیوں سے ہر بات کو محسوس کرنے والا ایک سراغ رساں ہے۔ اب دونوں کو یکجا کرکے ذرا غور کریں۔ ایک طرف عقرب کی خصوصیات ہیں جن میں بے لچک فیصلے اور رائے ہے، دوسری طرف میزان ہے جو ہر چیز کے مثبت اور منفی پہلوﺅں کو جانچتا ہی رہتا ہے۔ یہ دو متضاد خصوصیات، یعنی عقرب کے فیصلہ کن عقائد و نظریات اور دوسری طرف مستقل غیر یقینیکی کیفیت۔ ان دونوں کا ملاپ ایک کھنچاﺅ اور کشاکش کی کیفیت پیدا کر سکتا ہے۔ عقرب افراد کو مستقل توجہ کی ضرورت ہوتی ہے اور وہ دوسروں کو خوش کرنے والی حرکتوں کو پسند کرتے ہیں جب کہ میزان نرم خو اور بالکل مختلف طبیعت کے مالک ہوتے ہیں، اس لیے انہیں عقرب ساتھی کی حرکتوں سے تکلیف پہنچ سکتی ہے۔ میزان کی نفیس شخصیت، عقرب شخصیت کی شدت پسندی سے بجھ کر رہ جائے گی۔ اس صورت حال میں میزان کی آزردگی تعجب کی بات نہ ہوگی اور معاملہ نہایت تکلیف دہ ہو جائے گا۔
میزان افراد پیدائشی طور پر خوش امید شخصیت کے مالک ہوتے ہیں جب کہ عقرب اس کے بالکل برعکس۔ وہ چھوٹی چھوٹی ناکامیوںپر بھی بہت مایوسی کا شکار ہوتے ہیں۔ یہ صورت حال ناقابل اصلاح ہے۔ ایک میزان کے لیے عقرب شخصیت کو سمجھنا بہت مشکل کام ہے۔ ان تمام تضادات کے باوجود اگر میزان اور عقرب کا ساتھ ہوجائے تو انہیں ایک دوسرے کی خواہشات، ضرورتوں اور باہمی خدشات سے واقف ہونا ضروری ہوگا تاکہ وہ ایک دوسرے کو سمجھ کر زندگی گزاردیں، تب ہی ان کا ملاپ اور تعلق بامعنی ہوگا۔


میزان اور قوس کا ساتھ

قوس کا عنصر آگ ہے جسے میزانی ہوا کی ضرورت ہے۔ علم نجوم کے قواعد کی رو سے بھی یہ دوستی کا میلان رکھتے ہیں۔ قوس ایک قانون دان دانا و بینا عارف ہے۔ اصول پسند، دیانت دار لیکن بے صبرا اور پُرشوق۔ بے تکلف، صاف گو، بے خوف، اکھڑ، دلیل پسند، فلسفی اور من موجی۔

میزان سے قوس کا تعلق بہت خوب صورت ہو سکتا ہے۔ قوس میزان کی دل کش گفتگو اور صاف گوئی پر فدا رہے گا اور میزان شخصیت کی جاذبیت پر رشک کرے گا۔ ان دونوں بروج کی شخصیات گفتگو اور بحث و مباحثہ پسند کرتی ہیں اور گھنٹوں بات چیت میں یہ دونوں مگن رہتے ہیں، خواہ آدھی رات سے زیادہ بیت جائے اور یوں بوریت ان کے قریب نہیں پھٹکتی۔

میزان اور قوس میں پُرامیدی کوٹ کوٹ کر بھری ہوتی ہے۔ انہیں امید ہوتی ہے کہ طوفان کے بعد ایک حسین قوس قزح نظر آئے گی۔ ان مشترکہ خوبیوں یا خصوصیات کے ساتھ ہی ان دونوں میں کچھ تفرقات بھی پائے جاتے ہیں۔ قوس بعض اوقات کوئی بے تکی بات یا بغیر سوچے سمجھے بات چیت سے میزان کی دل آزاری کا سبب بھی بن جاتا ہے، بس یہی ایک کانٹا اس جوڑے کے درمیان کبھی کبھی کھٹکتارہتا ہے جس کی چبھن میزان برداشت کر لیتا ہے۔ اس سے قطع نظریہ ملاپ بہت حسین اور دل آویز ہو سکتا ہے اور یہ دونوں ایک ساتھ خوش گوار زندگی گزار سکتے ہیں۔

میزان اور جدی کا ساتھ


یہ ہوا اور مٹی کا ساتھ ہے، یعنی دو مخالف عنصر۔ علم نجوم کے اصول و قواعد کے مطابق بھی یہ دو مخالف زاویے ہیں۔ جدی حقیقت پسند اور فعال، جرات مند، بدظن، شک کرنے والا، کم گو، مصلحت اندیش، تنہائی پسند، خودغرض، روایت پسند، سخت محنت کرنے والا ہوتا ہے۔

میزان اورجدی اپنے شخصی و مزاجی اختلاف کے باوجود اگر ایک رشتے میں بندھ جائیں توایک بہترین جوڑی بن سکتے ہیں۔ ان دونوں کا ملاپ بہت خوش گوار انداز میں شروع ہوتا ہے۔ بکری کے نشان والا جدی، میزان شخصیت کو اپنے لیے بہت ہم درد اور مہربان پاتا ہے۔ میزان فرد جدی کی رومان پسندی کے خفیہ جذبات کی بھی بہت اطمینان بخش طور پر تسکین کرتا ہے لیکن بالآخر جدی کی تنظیم پسندی، یعنی نظم و ضبط کی عادت اور روایت پسندی براہ راست میزان کی نرم خو اور لیت و لعل کی عادت سے متصادم ہوتی ہے پھر بھی میزان کی رجائیت پسندی(بہتری کے لیے پُرامید رہنا) اور روشن مستقبل پریقین حالات کو خراب ہونے سے روکتا ہے۔ یوں جدی کے تحمل، دانش اور حکمت عملی کے ساتھ میزان کی امن پسندی دونوں کا اچھا جوڑ بنا سکتی ہے۔ بہ صورت دیگر یہ جوڑی کامیاب رفاقت کا نمونہ بن سکے گی۔

میزان اور دلو کا ساتھ

دونوں بروج ہوائی عنصر رکھتے ہیں جو مدافعت کی دلیل ہے۔ علم نجوم کے قواعد کے تحت دونوں میں حقیقی دوستی کی نظر ہے۔ دلو کی شخصیت میں سچائی و ایمان داری، ہر دل عزیزی، حق کی تلاش، وسیع النظری، رواداری، غیرجانب داری، نرم دلی جیسی خوبیاں موجود ہوتی ہیں، ساتھ ہی خامیوں میں تذبذب، بدظنی، باغیانہ سوچ، نااہلی وغیرہ نمایاں ہیں۔

میزان اور دلو کی جوڑی انتہائی کامیاب ثابت ہو سکتی ہے۔ دونوں برجوں کی طبیعت میں فرحت و تازگی ہوتی ہے اور یہ نئے دوست بنانا پسند کرتے ہیں۔ انہیں نئے نئے خیالات اور پُرمسرت لمحوں میں دل چسپی ہوتی ہے۔ میزان کو اپنے دلو ساتھی کی اس خوبی سے بہت مدد ملتی ہے کہ وہ معاملات کو سمجھنے اور کسی نتیجے پر پہنچنے میں ملکہ رکھتا ہے۔ بس یوں سمجھ لیجیے کہ میزان اور دلو کا تعلق ایسا ہے جیسے کسی کاریگر کے ہاتھ میں(میزان کے) نرم، گندھی ہوئی مٹی(دلو) جس کو وہ اپنی مرضی کے مطابق شکلدے سکے۔

ان دونوں میں ذہنی اور جذباتی یکسانیت بہت زیادہ ہوتی ہے، اس لیے ان کے درمیان اوّل تو کبھی غلط فہمی پیدا ہونے کا امکان ہی نہیں ہوتا اور اگر کبھی ایسا ہو بھی جائے تویہ کسی بڑے اختلاف یا جھگڑے کی شکل اختیار نہیں کرتا۔
دلو میں نئے نئے خیالات اور رجحانات پیدا کرنے کی صلاحیت ہوتی ہے اور میزان میں ان تصورات کو عملی شکل دینے کی اہلیت۔ اس دوطرفہ تعلق میں میزان کی حیثیت ایک متحمل اور ٹھنڈے مزاج والے فرد کی اور دلو کی حیثیت قوت برداشت اور تسلیم و رضا کی سی ہے، لہٰذا یہ دونوں ایک دوسرے کے لیے بے حد معاون و مفید رہتے ہیں اور ان کی جوڑی بہت کامیاب ہوتی ہے۔

میزان اور حوت کا ساتھ


یہ ہوا اور پانی کا ساتھ ہے، یعنی میزان کا عنصر ہوا اور حوت کا پانی۔ دونوں کے درمیان عنصری اعتبار سے کوئی خصوصی تعلق نہیں۔ دونوں کے راستے جدا جدا ہیں۔ علم نجوم کے قواعد کے مطابق بھی دونوں میں دوستی ہے نہ دشمنی۔

برج حوت، میزان سے چھٹے نمبر پر ہے اور چھٹا خانہ زائچے میں صحت، ملازم و ماتحت کا ہے، لہٰذا حوت کے لیے میزان شخصیت میں دل چسپی پیدا ہوتی ہے۔ وہ اس کے فن کارانہ طور طریقوں سے متاثر ہوتا ہے، جب کہ برج حوت سے میزان کا نمبر آٹھ ہے اور آٹھواں خانہ شراکت مفادات، حادثات اور جنس کا بھی ہے۔ چناں چہ میزانی افراد کسی مفاد کے پیش نظر، اتفاقیہ طور پر ہی برج حوت کی طرف متوجہ ہوتے ہیں اور ان کی رفاقت میں دل چسپی محسوس کرنے لگتے ہیں۔

ب۔
[/f

Offline Master Mind

  • 4u
  • Administrator
  • *
  • Posts: 4468
  • Reputation: 85
  • Gender: Male
  • Hum Sab Ek Hin
    • Dilse
    • Email
Re: Libra (Horoscope) برج میزان
« Reply #2 on: March 19, 2013, 05:19 AM »

رج حوت سے متعلق افراد کو خواب دیکھنے والا، رومانی اور کسی حد تک پُراسرار شخصیت کا مالک کہا جاتا ہے۔ ان کی روحانی اور تخیلاتی قوتیں بھی غیرمعمولی ہوتی ہیں۔ بے حدحساس، رازداری سے کام کرنے والا لیکن بے عمل، اپنے ذاتی مفاد کی قربانی دینے والا، فراریت پر مائل، مہربان۔ حوت اور میزان جب ایک تعلق یا رشتے میں بندھتے ہیں تو یہ ساتھ خوش گوار ہو سکتا ہے، اگر دونوں ایک دوسرے کو کچھ رعایات دے سکیں۔[/color][/size]
میزان اور حوت دونوں میں غیرمعمولی فن کارانہ خوبیاں اور حسِ لطافت موجود ہوتی ہے۔ پھر بھی کبھی کبھی میزان کی قوت فیصلہ کی کمی اور حوت کی بے عملی کی کیفیت بڑی دل چسپ صورت حال پیدا کردیتی ہے۔ ایک حقیقت یہ بھی ہے کہ میزان اور حوت دونوں ایک دوسرے کو پوری طرح سمجھنے میں خاصا وقت لگاتے ہیں۔ حوت خاص طور پر اس ضمن میں پریشان رہتا ہے کہ آخر میزان کی حقیقت کیا ہے اور اس کے مقاصد کیا ہیں؟ اسی طرح میزان کو حوت کی شخصیت اور خصوصیات عجیب سی لگتی ہیں اور یہی پہلو کہ دونوں ایک دوسرے کو اچھی طرح جان پہچان سکیں، بڑا دل چسپ اور متنازع ہے۔ اس حوالے سے یہ جوڑی بہت پریشان اور الجھن زدہ رہتی ہے۔
حوت نہایت گہرا رومانی تعلق چاہتا ہے لیکن میزان کی دیگر سماجی سرگرمیاں اور رومانی دل چسپیاں اس میں مایوسی اور رقابت کا جذبہ پیدا کرتی ہیں، جس کی وجہ سے دونوں کے ازدواجی تعلقات متاثر ہوتے ہیں۔ میزان کو حوت کی مایوسی، بے عملی اور شکایات سے پریشانی ہوتی ہے اور پھر وہ اپنی پسند کا ماحول ڈھونڈنے کے لیے راہِ فرار اختیار کر سکتا ہے