Author Topic: Pisces (Horoscope) برج حوت  (Read 2337 times)

0 Members and 2 Guests are viewing this topic.

Offline Master Mind

  • 4u
  • Administrator
  • *
  • Posts: 4468
  • Reputation: 85
  • Gender: Male
  • Hum Sab Ek Hin
    • Dilse
    • Email
Pisces (Horoscope) برج حوت
« on: November 22, 2010, 04:52 AM »
برج حوت
« Last Edit: December 26, 2010, 03:51 AM by Master Mind »

Offline Master Mind

  • 4u
  • Administrator
  • *
  • Posts: 4468
  • Reputation: 85
  • Gender: Male
  • Hum Sab Ek Hin
    • Dilse
    • Email
Re: Pisces (Horoscope) برج حوت
« Reply #1 on: November 24, 2010, 08:44 AM »
برج حوت
نشان       ۔۔۔۔۔۔      دو مچھلیاں
تاریخ پیدائش    ۔۔۔۔۔۔      20؍ فروری تا 20؍ مارچ
حاکم سیارہ   ۔۔۔۔۔۔      نپ چون
عنصر      ۔۔۔۔۔۔      آبی
مبارک دن    ۔۔۔۔۔۔      اتوار، پیر ، جمعرات
مبارک عدد   ۔۔۔۔۔۔      7
مبارک پتھر   ۔۔۔۔۔۔      پکھراج، نیلم اور پنا
مبارک رنگ   ۔۔۔۔۔۔      گہرا نیلا، سلیٹی، سفید ، بنفشی


مثبت خصوصیات


ہمدرد، مخلص، دوست نواز، ملنسار، خوش اخلاق، درگزر کرنے والے، تخلیق کار، دلکش شخصیت کے مالک، اچھے منصوبہ ساز، ذہین، گہرا مشاہدہ کرنے والے، اچھے منتظم، نفاست پسند، خوش لباس، بذلہ سنج، وعدے کے پابند، حساس، امن پسند

 
منفی خصوصیات


سست و کاہل، وقت کی قدر نہ کرنے والے، مستقبل سے بے فکر، دوسروں کی خاطر خود کو نظر انداز کرنے والے، دوسروں کو بے وقوف بنانے والے، انتہا پسند، کام ادھورے چھوڑنے والے، فضول خرچ، خیالوں کے باسی، دل پھینک، جنسی بے راہ رو، مختلف کاموں سے گھبرانے والے، نشہ کی طرف راغب

« Last Edit: December 26, 2010, 03:57 AM by Master Mind »

Offline Master Mind

  • 4u
  • Administrator
  • *
  • Posts: 4468
  • Reputation: 85
  • Gender: Male
  • Hum Sab Ek Hin
    • Dilse
    • Email
Re: Pisces (Horoscope) برج حوت
« Reply #2 on: December 26, 2010, 04:02 AM »
مشہور

جارج برنارڈ شا، جارج واشنگٹن، رضا شاہ پہلوی، مغل شہنشاہ نصیر الدین، ہمایوں، داراشکوہ، صدر سوہارتر، آئن اسٹائن، اسٹالن، الزبتھ ٹیلر، وکٹر پیوگو

Offline Master Mind

  • 4u
  • Administrator
  • *
  • Posts: 4468
  • Reputation: 85
  • Gender: Male
  • Hum Sab Ek Hin
    • Dilse
    • Email
Re: Pisces (Horoscope) برج حوت
« Reply #3 on: March 19, 2013, 04:53 AM »



یہ دائرئہ بروج کا اختتامی برج ہے جو بارہویں نمبر پر واقع ہے۔ سورج پہلے برج حمل سے اپنے جس سالانہ سفر کا آغاز کرتا ہے، اس کا اختتام برج حوت کے آخری درجے پر ہوتا ہے اور پھر برج حمل کے صفر درجے سے نیا سالانہ دورہ شروع ہوتا ہے۔
برج حوت ذوجسدین ہے، یعنی دو رُخ رکھتا ہے، اسی لیے اس کے زیراثر پیدا ہونے والے دہری شخصیت کے حامل ہوتے ہیں۔ یہ اپنی فطرت میں مونث اور منفی ہے۔ تغیرپذیری اس کا وصف خاص ہے۔ جسم انسانی میں پاﺅں اس سے متعلق ہیں۔ انسانی روح و جذبات پر خصوصی اثر رکھتا ہے۔ آبی تکون کا تیسرا اور آخری رکن ہے۔ قدیم علم نجوم میں سیارہ مشتری اس کا حاکم تصور کیا جاتا تھا مگر جدید تحقیقات کی روشنی میں سیارہ نیپچون کو اس کا حکمراں تسلیم کیا گیا ہے۔

برج دلو اور حوت کی حد اتصال

اگر آپ کی تاریخ پیدائش 16 فروری سے 22 فروری کے درمیان ہے تو آپ برج دلو اور حوت کے اتصالی درجات پر پیدا ہوئے ہیں۔ گویا دلو اور حوت کی امتزاجی خصوصیات کے حامل ہیں۔ یورینساور نیپچون دونوں آپ کی شخصیت پر اثرانداز ہیں۔ دلو کی اختراع پسندی اور حوت کی حساسیت کے اشتراک سے جو شخصیت جنم لیتی ہے، وہ کچھ متضاد خصوصیات کا اظہار کرے گی اور ابتدائی عمر میں آپ کا ناپختہ ذہن کسی کشاکش سے دوچار ہو سکتا ہے۔ آپ کو اپنی بیشتر توانائیاں دو حلقوں یا دائروں میں صرف کرنا پڑیں گی، ایک تو ذاتی حلقے میں اور دوسرے کائناتی حلقے میں اور اس عمل میں آپ دینوی حلقے سے کترا کے نکل جائیں گے۔ آپ ایسے کھوجی یا متلاشی ہیں جو اپنے آپ کو دریافت کرنے کے لیے ناصرف اپنی ذات کی تہ میں اترنے کا حوصلہ رکھتے ہیں بلکہ اس سے بھی آگے نکل جانے کے آرزو مند ہوتے ہیں۔ آپ کے اندر قدرتی طور پر تخلیقی اور تخیلاتی خوبیاں موجود ہیں اور ہم دردی کے جذبات بھی پائے جاتے ہیں مگر آپ کا رویہ قدرے سردمہری کا سا ہے۔ آپ صاف دل اور کھلے ذہن کے مالک ہیں مگر جب کسی کی طرف سے دل میلا ہوجائے اور ذہن الجھنے لگے تو پھر آپ کے طور طریقے کچھ بھی ہو سکتے ہیں۔ آپ کی نمایاں خوبی آپ کی متعدد صلاحیتیں ہیں اور آپ یقینا کوئی نمایاں نوعیت کا کارنامہ انجام دینے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ آپ کے لیے مشورہ یہ ہے کہ اپنی شخصیت کی دو رُخی کیفیات پر قابو رکھیں اور درمیانی راستے پر زندگی کا سفر طے کریں۔

برج حوت کا طرہ امتیاز

شاعرانہ خواب، تخیلاتی احساسات، پُراسرار روحانی تجربات و مشاہدات برج حوت کی نمایاں ترین خصوصیات ہیں، لہٰذا پُراسراریت اس برج کے تحت پیدا ہونے والے خواتین و حضرات کی شخصیت کا لازمی حصہ ہوتی ہے جس کا اظہار ان کی عادات و اطوار کے علاوہ ان کی ساحر آنکھوں سے بھی ہوتا ہے۔ اکثر حوتی اپنی آنکھوں سے ہی پہچانے جاتے ہیں، ان کی بڑی بڑی خوب صورت آنکھیں چہرے کا نمایاں ترین حصہ ہوتی ہیں جن میں عموماً ایک خاموشی، اداسی یا گہری سنجیدگی ڈیرہ ڈالے بیٹھی رہتی ہے۔ حوت افراد کو اگر نفسیاتی اعتبار سے پے چیدہ ترین قرار دیا جائے تو یہ غلط نہ ہوگا۔ یہ بھی درست ہے کہ ان سے بہتر میڈیم(معمول) کوئی دوسرا نہیں ہوگا، کیوں کہ یہ دنیا کے سب سے زیادہ حساس لوگ ہوتے ہیں۔ اپنی اسی حساسیت کی وجہ سے یہ اکثر غیرمعمولی تخیلاتی و تخلیقی تجربات سے آشنائی حاصل کرتے ہیں اور ایسی باتوں یا جہتوں کا بھی ادراک کر لیتے ہیں جہاں عام انسان کے ذہن کی رسائی ممکن نہیں ہوتی ہے۔

“مائع شخصیت”

برج حوت سے متعلق افراد(مرد و خواتین) کو اگر ایک ”مائع شخصیت“ کا نام دیا جائے تو غلط نہ ہوگا، کیوں کہ ان کی شخصیت و کردار میں کسی سیال شے کے مانند بہاﺅ اور پھیلاﺅ موجود ہوتا ہے اور ایک خیالی پُراسراریت ان کی خصوصیات میں نظر آتی ہے۔ اگرچہ اس کے ساتھ ہی ان کے اندر فن کارانہ نفاست بھی پائی جاتی ہے مگر حسن و خوبصورتی سے ان کی دل چسپی ایک انفرادی خصوصیت ہوتی ہے۔

حوت کا عشرہ اوّل

اگر آپ کی تاریخ پیدائش 23 فروری تا 3 مارچ ہے تو آپ کا شمار برج حوت کے پہلے عشرے، یعنی ابتدائی حصے میں پیدا ہونے والے افراد میں ہے۔ اس عشرے کی مدت میں روح کو مرکزیت حاصل ہے، لہٰذا آپ روح کو مادیت پر فوقیت دیتے ہیں اور اکثر خود کو کسی مثالی مقصد یا جستجو کے لیے وقف کر دیتے ہیں۔ اس عرصے میں پیدا ہونے والے بعض افراد عملیت سے اس قدر دور ہوتے ہیں کہ اگر انہیں مادی محنت و مشقت سے واسطہ پڑ جائے تو دنیا کی خرابیوں کا رونا رونے کی حد تک پہنچ جاتے ہیں اور اس کا ایسا نقشہ کھینچتے ہیں جس سے مادی زندگی کی تذلیل و تحقیر ہوتی ہے۔ دوسرے لفظوں میں وہ کام اور محنت سے اور اپنی دنیاوی ذمے داریوں سے فرار حاصل کرنے کی کوشش کر رہے ہوتے ہیں۔
عشرئہ اوّل کے بہت سے افراد زندگی کے مادی پہلو سے، یعنی نت نئے خیالات، موسیقی، سائنس، شعر و ادب اور دیگر فنی سرگرمیوں سے رغبت رکھتے ہیں اور ان سے لطف اندوز ہوتے ہیں۔ یہ لوگ اپنے آپ کو اپنے کام، مشن، خاندان یا اپنے مشغلے کے لیے وقف کر دیتے ہیں۔ عموماً یہ مشغلہ تو کم ہوتا ہے، اس کی نوعیت ایک جستجو کی سی ہوتی ہے۔ یہ لوگ شاذ و نادر ہی بے لگام اور انا پرست ہوتے ہیں تاہم ان کی زندگی میں تنہا پسندی اور اپنی ہی ذات میں گم رہنے کا عنصر بھی بڑھ سکتا ہے اور بعض اوقاتہے۔ حوت افراد کی خواہش ہوتی ہے کہ لوگ انہیں پسند کریں، ان سے محبت کریں، ان کی خواہش کریں، جب کہ جوزا اپنی پریشانیاں اور مصائب کسی دوسرے پر لادنے کا عادی و خواہش مند ہوتا ہے اور اسے اس کام کے لیے حوت ہی زیادہ موزوں نظر آتا ہے۔

برج حوت کا عشرہ دوم

اگر آپ 3 مارچ سے 10 مارچ تک کے عرصے میں کسی بھی تاریخ کو پیدا ہوئے ہیں تو آپ کا تعلق برج حوت کے دوسرے عشرے سے ہے اور اس عشرے پر برج سرطان اور سیارہ قمر کے اثرات پڑ رہے ہیں، لہٰذا آپ کی حوت شخصیت میں سرطانی اثرات بھی نمایاں ہیں۔ آپ کے مزاج میں تغیر و تبدل، غصہ اور جمہوریت پسندی کا رجحان موجود ہے۔ گھر اور گھریلو ماحول سے آپ رغبت رکھتے ہیں۔ آپ کے اندر ایک خفیہ باطنی قوت موجود ہے مگر آپ قمری اثرات کی وجہ سے زندگی کے مادی پہلو کو نظرانداز نہیں کرتے اور دنیاوی ضروریات کو اہمیت دیتے ہیں۔ اپنی روزمرہ کی گھریلو ذمے داریاں اور کاروباری تقاضے پوری طرح نبھاتے ہیں، یہ الگ بات ہے کہ اپنے دنیاوی فرائض کو موثر طریقے سے انجام دیتے ہوئے بھی آپ اپنی باطنی دنیا میں بھی مگن رہ سکتے ہیں۔ اگرچہ آپ بہت زیادہ سوشل نہیں ہیں تاہم عشرئہ اوّل کے حوتی افراد کے مقابلے میں زیادہ سماجی تعلقات رکھتے ہیں۔ حوت کے عشرئہ دوم کے بہت سے لوگ اپنے روزگار کے سلسلے میں گھر سے زیادہ دور جانا پسند نہیں کرتے بلکہ ان کی کوشش ہوتی ہے کہ گھر اور دفتر کو یک جا کرلیں۔ یہ لوگ دوسروں کے ساتھ کام کرتے ہوئے اس وقت بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہیں جب انہیں اپنی مرضی سے اور مکمل آزادی سے کام کرنے کا موقع ملے۔
[/c]


Offline Master Mind

  • 4u
  • Administrator
  • *
  • Posts: 4468
  • Reputation: 85
  • Gender: Male
  • Hum Sab Ek Hin
    • Dilse
    • Email
Re: Pisces (Horoscope) برج حوت
« Reply #4 on: March 19, 2013, 04:54 AM »



اگر آپ کی تاریخ پیدائش 11 مارچ سے 18 مارچ تک ہے تو آپ برج حوت کے تیسرے عشرے سے تعلق رکھتے ہیں جس پر برج عقرب کے اثرات پڑ رہے ہیں، لہٰذا عقربی خصوصیات آپ کی شخصیت اور فطرت میں موجود ہیں۔ گویا آپ ایک ایسے حوت فرد ہیں جس میں عقربی جوش و جذبہ اور شدت پسندی، تحقیق و تجسس کا مادہ موجود ہے۔
برج حوت کے عشرئہ سوم کے تحت پیدا ہونے والے حضرات اکثر فطری طور پر غیرمعمولی نفسیات اور وجدانی صلاحیتوں کے مالک ہوتے ہیں لیکن انہیں اگر اپنی صلاحیتوں کو آزمانے کا موقع مل جائے تو ان کی وہ صلاحیتیں حقیقتاً تذبذب اور شش و پنج میں ضائع ہو جاتی ہیں۔ متضاد نظریات، توانائیوں اور روزمرہ کی سرگرمیوں میں ایک توازن عشرئہ سوم میں پیدا ہونے والوں کے لیے ضروری ہے۔ اس کے بغیر وہ موثر انداز میں کارکردگی نہیں دکھا سکتے۔ بہرحال یہ سچ ہے کہ اس عشرے میں پیدا ہونے والے افراد اپنی ابتدائی عمر میں ہی ایسی خلاف معمول صلاحیتوں کا اظہار کرنے لگتے ہیں جو عام طور پر وقت، گنجائش اور مقصدیت کے خلاف اور ناقابل قبول ہوتی ہیں۔ شاید اس وجہ سے لوگ ان کے بارے میں متضاد نظریات قائم کر لیتے ہیں۔

حوت شوہر

شوہر کی حیثیت سے حوت افراد اگرچہ اپنے گھر اور بیوی بچوں کا بہت خیال رکھنے والے او رمحبت کرنے والے ہوتے ہیں مگر چوں کہ ان کی فطرت میں غیریقینی کیفیات اور خوداعتمادی کی کمی ہوتی ہے، اس لیے وہ معاشی طور پر زیادہ دولت کے حصول میں کامیاب نہیں رہتے۔ ان کی ایک کم زوری یہ بھی ہے کہ عموماً آج کا کام کل پر چھوڑ دیتے ہیں اور زندگی کے گرم و سرد حقائق کا سامنا کرنے سے کتراتے ہیں لیکن ان میں سے بعض مثبت سوچ کے حامل افراد زندگی میں نمایاں کامیابیاں حاصل کرتے ہیں جس سے ان کے بیوی بچوں کو فائدہ پہنچتا ہے۔ یہ لوگ اپنے وقار کا بڑا شعور رکھتے ہیں۔ دیکھنے میں وہ شائستہ مزاج اور پُرکشش ہوتے ہیں۔ عموماً یہ اپنے خاندان کی فلاح و بہبود کی خاطر خود اپنی فلاح و بہبود سے بے پروا ہو جاتے ہیں، یہاں تک کہ کسی اہم مقصد کے لیے اپنی جان کا نذرانہ پیش کرنے سے بھی دریغ نہیں کرتے۔ وہ بہت جذباتی ہوتے ہیں اور چاہتے ہیں کہ ان کی بیوی بھی ان کے جذبات کا خاطرخواہ جواب دے، بصورت دیگر ان کی نفسیات کوئی منفی رخ اختیار کر سکتی ہے۔
حوت بیوی

اس میں کوئی شک نہیں کہ حوت خواتین گھریلو زندگی کے لیے بہت موزوں ہوتی ہیں، کیوں کہ یہدوسری بیویوں کی طرح تیز و طرار نہیں ہوتیں اور ان کی روحانی خوبیاں اور جذباتی ردعمل بہت عمدہ ہوتا ہے، اس لیے ان کی رفاقت بہت سکون بخش ہوتی ہے۔ یہ بڑی باصلاحیت اور دوسروں کا خیال رکھنے والی ہوتی ہیں اور اپنے گھر کو پُرسکون اور شان دار بناتی ہیں، البتہ بعض منفی صفات خواتین تن پرور، حیلہ ساز، کاہل اور سست ہوجاتی ہیں اور ان کا رجحان فضول اور منفی کاموں کی طرف ہو جاتا ہے۔ ایسی خواتین عموماً خاندانی جھگڑوں کا سبب بن جاتی ہیں۔ اگر حوت بیوی کی صحت کسی وجہ سے متاثر ہو رہی ہو تو اسے شوہر اور خاندان والوں کی طرف سے ہمت افزائی اور رحم دلی کے مظاہرے کی ضرورت محسوس ہوتی ہے۔ اس کے برعکس رویہ ان کی بیماری کو بڑھا دیتا ہے۔ حوت بیوی بہت اچھا ردعمل ظاہر کرنے والی اور ذہنی اور جذباتی اعتبار سے بہت اچھی شریک حیات ثابت ہوتی ہے۔ یہ حالات کے مطابق خود کو ڈھالنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔ ازدواجی زندگی کے بارے میں اس کے خیالات بہت بلند و پاکیزہ اور بہت خوب صورت ہوتے ہیں۔

حوت کی مثبت و منفی خصوصیات

ایک حوت شخصیت اپنے مثبت پہلوﺅں میں پُراسرار و تخیلاتی، مہربان و ہم درد، ضرورت سے زیادہ حساس و فیاض، ترقی پسند، روشن خیال، نرم خو، متاثرکن، فطرت کی گرویدہ ہوتی ہے۔ اس کی منفی خصوصیات میں مبہم انداز، سست روی، بے پروائی، غیرعملی پن، اکثر موڈی، غیرمتوازن سا طرزعمل، خود کو دوسروں کے لیے مشکل اور پے چیدہ بنائے رکھنا، غیریقینی کیفیات اور انداز شامل ہیں۔ کسی بھی حوت فرد کا ذاتی زائچہ پیدائش اس کی مثبت و منفی خصوصیات میں کمی بیشی کا سبب ہو سکتا ہے۔ دل چسپ بات یہ بھی ہے کہ حد سے بڑھتی ہوئی مثبت یا منفی خصوصیات دونوں پہلوﺅں کی غیرمعمولی شخصیاتسامنے لاتی ہیں۔
برج حوت کے زیراثر پیدا ہونے والی چند مشہور شخصیات یہ ہیں: مشہور ریاضی دان البرٹ آئن اسٹائن، امریکی کمانڈر اور پہلا امریکی صدر جارج واشنگٹن، نوبل انعام یافتہ ادیب و شاعر وکٹر ہیوگو، روسی صدر میخائل گورباچوف، پہلا امریکی شطرنج کا عالمی چمپئن بوبی فشر، پہلا روسی خلا باز یوری گگارین، بھارتی وزیراعظم مرار جی ڈیسائی، ٹیلی فون کا موجد گراہم بیل، اداکارہ الزبتھ ٹیلر، ریکس ہیریسن، چک نورس، دیوڈینون، بھارتی فلم اسٹار عامر خان، کرکٹر و کپتان انضمام الحق، مشہور پیش گو ایڈ گرکیسی اور مارٹن لوتھر کنگ کا رسوائے زمانہ قاتل جیمس ارل رے۔

حوت کی محبت کے رنگ ڈھنگ

اس میں کوئی شک نہیں کہ برج حوت کے تحت پیدا ہونے والے افراد محبت کرنے اور چاہے جانےکی زبردست خواہش رکھتے ہیں لیکن ان کی شخصیت کا دہرا پن محبت کے معاملات میں بھی ایک متضاد صورت حال سے دوچار رہتا ہے۔ ایک طرف تو یہ لوگ تنوع، تبدیلیوں اور انواع و اقسام کی دل چسپیوں، چمک دمک اور بناﺅ سنگھار کے خواہش مند ہوتے ہیں جب کہ دوسری طرف لگے بندھے، محدود اصولوں کے متمنی یا پابند بھی ہوتے ہیں۔ بہرحال پھر بھی یہ لوگ ایک جان دار اور بھرپور محبت کی زندگی گزار سکتے ہیں جس میں متعدد رومانی سلسلوں سے واسطہ پڑ سکتا ہے۔ ان کے عشق و محبت کے معاملات اکثر پُراسرار اور رازدارانہ قسم کے ہوتے ہیں اور ان کی شادی عموماً بہت کامیاب ثابت نہیں ہوتی یا اس بات کو یوں بھی کہا جا سکتا ہے کہ شاید یہ لوگ شادی بیاہ کے بندھن پر زیادہ یقین نہیں رکھتے بلکہ ان کے نزدیک دو افراد کے باہمی روحانی تعلق کی اہمیت زیادہ ہے۔ بعض اوقات شادی کی صورت میں انہیں غلط شریک حیات بھی مل سکتا ہے، کیوں کہ شریک حیات کے انتخاب کے وقت یہ محض کسی جذباتی بہاﺅ میں بہ رہے ہوتے ہیں اور ایسا معلوم ہو رہا ہوتا ہے کہ جیسے یہ اس دنیا کے انسان نہیں ہیں بلکہ ان کا تعلق کسی اور ہی حیرت ناک دنیا سے ہے۔
[/c]


Offline Master Mind

  • 4u
  • Administrator
  • *
  • Posts: 4468
  • Reputation: 85
  • Gender: Male
  • Hum Sab Ek Hin
    • Dilse
    • Email
Re: Pisces (Horoscope) برج حوت
« Reply #5 on: March 19, 2013, 04:54 AM »



حوت کا عنصر پانی اور حمل کا آگ ہے، لہٰذا یہ آگ اور پانی کا ملاپ نامناسب ہے۔ علم نجوم کے قواعد کی رو سے یہ دونوں جڑواں برج ہیں۔ ان کے درمیان کوئی مثبت زاویہ نظر نہیں ہے۔ حمل شخصیت کے مثبت پہلو بے باکی و بہادری، پُرجوشی و طاقت، صاف ذہنی و صاف دلی، متحرک و بے چینی ہیں اور منفی خصوصیات میں خودغرضی، بے صبراپن، غرور و تکبر، ظلم و تشدد، حسد و قابضانہ فطرت اور اکھڑپن شامل ہیں۔
حوت اور حمل کا ساتھ سخت اذیت ناک ہو سکتا ہے، خصوصاً حوت شخصیت کے لیے، خواہ وہ عورت ہو یا مرد۔ حوت افراد حساس اور جذبا تی ہوتے ہیں۔ وہ محبت میں شریفانہ طور طریقے پسند کرتے ہیں جب کہ حمل کی آتش مزاجی اور جارحانہ انداز انہیں خوف زدہ کر سکتے ہیں۔ اگر اس جوڑی میں حوت عورت اور حمل مرد کا ساتھ ہو تو ازدواجی رفاقت چل سکتی ہے مگر اس طرح کہ حوت کو حمل کی محبت اور شریفانہ برتاﺅ کے لیے عمر بھر ترسنا پڑے گا مگر وہ اس کی کبھی پروا نہ کرے گا۔ اگر حوت مرد حمل عورت کا ساتھ ہوگا تو حوت مرد اس رشتے کو نبھانے کی ہر ممکن کوشش کرے گا مگر حمل عورت بگاڑ پیدا کرنے کے درپے رہے گی اور بالآخر حوت مرد کو بھاگنے پر مجبور کر دے گی، لہٰذا اس اشتراک کی کسی صورت میں سفارش نہیں کی جا سکتی۔

حوت اور ثور کا ساتھ

حوت پانی اور ثور مٹی۔ عناصر کا یہ اتحاد نہایت موافق اور زرخیزی کا آئینہ دار ہے۔ علم نجوم کے قواعد کی رو سے بھی دونوں بروج کے درمیان موافق زاویہ نظر ہے۔ ثور اپنے مثبت پہلوﺅں میں قابل بھروسا، عملی، سخی، مضبوط و مستحکم، ہم درد اور وفادار ہے اور منفی پہلوﺅں میں ضدی، ہٹ دھرم، متعصب، اکھڑ و تنگ نظر ہے۔
حوت اور ثور کی جوڑی بالعموم کامیاب رہتی ہے اور خوش و خرم زندگی گزرتی ہے۔ دونوں کو ایک دوسرے میں وہ خوبیاں مل جاتی ہیں جو ان کی ضرورت ہیں۔ حوت کی رومانیت اور تصوراتی شخصیت ثور کو بھاتی ہے اور ثور کی ثابت قدمی، طاقت ور تحفظ اور عمل پسندی حوت کی ضرورت ہوتی ہے۔ حوت ایک قابل بھروسا ثور کے سامنے سر تسلیم خم کر دیتا ہے۔ ثور کا فن کارانہ مزاج حوت کی حساسیت اور نازک مزاجی، تخلیقی صلاحیت سے تسکین پاتا ہے جب کہ نازک مزاج اور اپنے خیالوں میں مگن رہنے والے حوت کو ایک طاقت ور سہارا مل جاتا ہے۔ اگر اس شراکت میں عورت ثور ہو اور حوت مرد اس کی کفالت میں ناکام ہونے لگے تو ثور عورت گھر سے متعلق ہر ذمے داری کا بوجھ اٹھانے کے لیے بھی تیار ہو جاتیہے۔ البتہ ثور شخصیت کو خواہ وہ مرد ہو یا عورت اس بات کا خیال رکھنا ہوگا کہ اس کا واسطہ ایک نہایت حساس اور پے چیدہ شخصیت سے ہے جو اس کی کسی ضد یا جارحانہ رویے کی متحمل نہیں ہو سکتی اور یہ سلسلہ اگر زیادہ جاری رہے تو حوت کی نفسیات پر بہت برا اثر پڑ سکتا ہے۔ بہرحال یہ ایک شان دار شراکت ہو سکتی ہے۔

حوت اور سرطان کا ساتھ

دونوں کا عنصر پانی ہے اور ان دونوں کے ملاپ میں بڑی روانی ہے۔ علم نجوم کے اصول و قواعد کے مطابق سرطان برج حوت سے پانچویں نمبر پر اور حوت برج سرطان سے نویں نمبر پر ہے، گویا دونوں کے درمیان شان دار موافقت کا زاویہ¿ نظر موجود ہے۔
سرطان شخصیت مضبوط اور حساس، ہم درد اور پُراسرار، موثر اور وفادار، بااصول اور تخیلاتی ہوتی ہے لیکن اپنے منفی پہلوﺅں میں یہ لوگ موڈی، احساس کم تری کا شکار، متذبذب، معاف نہ کرنے والے، یاسیت پسند اور زودرنج ہوتے ہیں۔
حوت اور سرطان شخصیات(مچھلی اور کیکڑے) میں ایک دوسرے کو سمجھنے کی خصوصی صلاحیت ہوتی ہے۔ یہ دونوں ہی بروج تصوراتی اور حساس افراد کی نشان دہی کرتے ہیں۔ ان کی جوڑی بہت اچھی ہو سکتی ہے۔ دونوں ہی من موجی ہوتے ہیں اور یہ فیصلہ کرنا آسان نہیں کہ ان میں سے کون اس خصوصیت میں آگے ہے۔ حوت افراد کو روپے پیسے کی پروا نہیں ہوتی اور وہ مالی معاملات میں زیادہ دل چسپی نہیں رکھتے، جب کہ سرطان شخصیت کو پیسے کی بو ہی سونگھ کر خوشی مل جاتی ہے۔ حوت شخصیت کے لیے اپنے سرطان شریک حیات کی جمع کردہ دولت میں ذرا سی بھی دل چسپی یا کشش نہیں ہوتی ہے اور خود اس میں بچت کی عادت یا صلاحیت نہیں پائی جاتی۔ ہم حوت افراد کو فضول خرچ بھی کہہ سکتے ہیں۔ یہ دونوں پانی کی مخلوق ہیں، اس لیے زیادہ عرصے ایک دوسرے سے علیحدہ رہ ہی نہیں سکتے۔ یہ اور بات ہے کہ دونوں کبھی کبھار سیر و تفریح کے لیے نکل کھڑے ہوں مگر محض وقتی طو رپر۔ بہرحال دونوں ہی اپنے مشترکہ مفاد کے لیے ازدواجی زندگی کی گاڑی کو کھینچتے رہتے ہیں۔ دونوں ہی جذباتی اور شدید محبت کرنے والے ہوتے ہیں اور کسی چیز کو حاصل کر کے اپنے قبضے میں رکھ کر خوش ہوتے ہیں۔ ان کے درمیان ایسے لمحات بھی یقینا آئیں گے جب دونوں ہی یاسیت اور مایوسی کا شکار ہو جائیں لیکن یہ ایک وقتی چیز ہوگی۔
حوت اور اسد کا ساتھ

برج حوت کا عنصر پانی اور اسد کا آگ ہے۔ آگ اور پانی میں کوئی موافقت نہیں۔ علم نجوم کے قواعد کی روشنی میں بھی یہ کوئی موافق نظر نہیں رکھتے۔ اسد شخصیت فراخ دل، خودشناس، باوقار، حاکمانہ طور طریقوں کی عادی ہوتی ہیں اور اپنی منفی خصوصیات میں خودپسند، مغرور اور ضرورت سے زیادہ پُراعتماد ہے۔ حوت اور اسد کی شراکت اطمینان بخش اور خوش گوار نہیں ہو سکتی۔ شیر(اسد) کی خصوصیت سب سے آگے رہنا ہے۔ اس کے ساتھ وہ یہ بھی چاہتا ہے کہ دوسرے اس کا ادب کریں اور حکم مانیں۔ مچھلی(حوت) اپنی حفاظت اور سلامتی کے لیے کسی مضبوط سہارے کی متلاشی ہوتی ہے، لہٰذا شیر کی رفاقت اسے متاثر کر سکتی ہے اور شیر کو بھی مچھلی کی معصومیت اور فرماں برداری پسند آتی ہے مگر یہ ابتدائی ملاقاتوں کی بات ہے۔ عملی زندگی میں صورت حال کچھ اور ہو جاتی ہے۔ مچھلی کو بہت جلد شیر کی انا پرستی اور تکبر تکلیف دہ محسوس ہونے لگتا ہے اور وہ شیر کی مستقل دھاڑ سے خوف زدہ رہنے لگتی ہے، لہٰذا ایسی صورت میں ممکن ہے کہ وہ تیرتی ہوئی کہیں اور نکل جائے۔ مچھلی کی مالی معاملات میں احتیاط پسندی شیر کو ہرگز نہیں بھائے گی، کیوں کہ وہ محدود انداز میں تنگی ترشی کی زندگی گزارنا پسند نہیں کرے گا، یوں یہ رشتہ اور تعلق کچھ دیرپا اور پُرسکون نہیں ہو سکتا۔ شیر مچھلی کی قبضہ گیری کی عادت کو بھی برداشت نہیں کرے گا اور نہ ہی اس کے رونے دھونے پر خاموش رہ سکتا ہے، چناں چہ بہتر یہی ہوگا کہ یہ رشتہ جوڑنے کی کوشش نہ کی جائے۔

حوت اور سنبلہ کا ساتھ

حوت پانی اور سنبلہ کا عنصر مٹی ہے۔ عناصر کے اعتبار سے دونوں میں موافقت ہے۔ چناں چہ دونوں باہم ایک دوسرے کے لیے کشش محسوس کر سکتے ہیں لیکن علم نجوم کے قواعد کے مطابق یہ دونوں مقابلے کے بروج ہیں۔ ان میں ایک حریفانہ انداز موجود ہے۔ اگرچہ دونوں ایک دوسرے سے ساتویں نمبر پر ہیں، جو شراکت کی علامت ہے مگر اس شراکت میں بہرحال کچھ تضادات موجود ہیں۔ سنبلہ شخصیت کے مثبت پہلوﺅں میں اصول و قواعد، نظم و ضبط، نپاتلا انداز، درستی و معقولیت، دلیل و تجزیہ، شعور و امتیاز شامل ہیں، جب کہ منفی پہلوﺅں میں اعتراض و نکتہ چینی کی عادت، تنگ نظری، مصنوعی پن وغیرہ نمایاں ہیں۔ ہمیں شک نہیں کہ یہ دونوں ایک دوسرے میں قدرتی کشش محسوس کرتے ہیں لیکن ان کی شراکت بہت زیادہ اطمینان بخش اور خوش گوار ثابت نہیں ہوتی، خصوصاً ایک حوت عورت اور سنبلہ مرد کے درمیان تضادات بڑھ جاتے ہیں، جب کہ سنبلہ عورت اور حوت مرد کیشراکت میں ان تضادات پر قابو پانا آسان ہوگا۔ حوت عورت سنبلہ مرد کی نظم و ضبط کی خواہش کو پورا نہیں کر سکتی اور اس کی تنقید و تجزیے کی عادت سے پریشان ہو سکتی ہے۔ سنبلہ مرد مشین کی طرح حرکت کرتا ہے اور ہر وقت کام میں مصروف رہتا ہے۔ اس کی زندگی میں مقصدیت کی بڑی اہمیت ہے، جب کہ حوت عورت کی جذباتیت اسے اکثر مقصدیت سے ہٹا دیتی ہے البتہ معاملہ اس کے برعکس ہو، یعنی یہ شراکت سنبلہ عورت اور حوت مرد کے درمیان ہو تو پھر سنبلہ عورت بالآخر حوت مرد کو سنبھال لیتی ہے۔ اس طرح یہ رفاقت کامیاب ہو جاتی ہے۔ بہرحال اس جوڑی کے لیے آنکھ بند کر کے سفارش نہیں کی جا سکتی۔

[/size]

Offline Master Mind

  • 4u
  • Administrator
  • *
  • Posts: 4468
  • Reputation: 85
  • Gender: Male
  • Hum Sab Ek Hin
    • Dilse
    • Email
Re: Pisces (Horoscope) برج حوت
« Reply #6 on: March 19, 2013, 04:56 AM »
[size=78%][/size]


یہ پانی اور ہوا کا ساتھ ہے۔ عناصر کے اعتبار سے دونوں کے درمیان کوئی موافقت یا مخالفت نہیں۔ علم نجوم کے قواعد کی رو سے بھی دونوں میں کوئی موافقت کا سلسلہ نہیں ہے۔ میزان شخصیت اپنی مثبت خصوصیات میں نفیس و پُرکشش، متوازن اور انصاف پسند، ہوشیار و عقل مند ہوتی ہے لیکن اپنی منفی خصوصیت میں سست، کاہل، پس و پیش میں مبتلا اور غیر مخلص ہوتی ہے۔ حوت اور میزان دوستی، محبت یا کاروباری شراکت میں ایک دوسرے کے ساتھ بہتر اور مفید وقت گزار سکتے ہیں اور ایک دوسرے کے لیے کشش بھی محسوس کرتے ہیں لیکن اگر ان کے درمیان ازدواجی تعلقات قائم ہو جائیں تو کچھ پے چیدہ مسائل جنم لے سکتے ہیں۔ میزان کبھی بھی حوت کے مزاج اور جذبات کو نہیں سمجھ سکتا۔ اسی طرح حوت کی یہ سمجھ میں نہیں آتا کہ میزان کیا چاہتا ہے؟ ان دونوں کو ایک دوسرے کو سمجھنے میں کافی وقت لگتا ہے۔ دونوں میں غیرمعمولی فن کارانہ خوبیاں اور حس لطافت موجود ہوتی ہے لیکن کبھی کبھی میزان کی قوت فیصلہ کی کمی اور حوت کی بے عملی کی کیفیت کوئی پے چیدہ صورت حال پیدا کر سکتی ہے۔ میزان کو حوت کی شخصیت اور خصوصیات عجیب سی لگتی ہیں۔ بہرحال یہ ایک عجیب اور دل چسپ جوڑی بنتی ہے جس میں کامیابی اور ناکامی دونوں صورتوں کا امکان موجود رہتا ہے۔

حوت اور عقرب کا ساتھ

دونوں کا عنصر پانی ہے۔ ان کی باہمی شراکت ایک دوسرے کے لیے عجیب تقویت کا باعث ہوگی۔ علم نجوم کے قواعد کی رو سے دونوں بروج کے درمیان حقیقی نظر موافقت موجود ہے۔ عقرب شخصیت کے مثبت پہلو یہ ہیں: مضبوط قوت ارادی، خود اعتمادی، مقناطیسی، مصلحت اندیشی، ہمت، ہوشیاری اور پُراسراریت، جب کہ منفی پہلوﺅں میں اثر اور تسلط و غلبہ رکھنے کی خواہش، طنزیہ انداز، تشدد پسندی اورتکبر شامل ہیں۔ حوت اور عقرب سیال صفت بروج ہیں اور باہمی طور پر زبردست کشش رکھتے ہیں۔ ان دونوں کے درمیان ایک طرح کا فوری اور زبردست مقناطیسی تعلق قائم ہوتا ہے۔ گویا یہ ایک بہت محبت کرنے والی جوڑی بنتی ہے۔ دونوں ایک دوسرے کو بھرپور طریقے سے سمجھتے ہیں اور قدرتی طور پر ایک دوسرے کی طبیعت، احساسات اور خیالات سے باخبر ہوتے ہیں۔ یہ ایک عجیب سا ذہنی تعلق لگتا ہے۔ بچھو(عقرب) مچھلی(حوت) کو تحریک دلاتا ہے اور مچھلی کو بچھو میں ایک شان دار عکس نظر آتا ہے۔ ان دونوں میں اپنے اپنے خواب اور خیالات پر ایک دوسرے کے ساتھ بات چیت اور تبادلہ خیال کی صلاحیت موجود ہے۔ یہ اور بات ہے کہ کسی تبادلہ خیال کے بغیر بھی وہ ایک دوسرے کے جذبات سے بخوبی واقف ہوتے ہیں۔ پھر بھی کسی موقع پر اگر ذہنی مسابقت کی ضرورت پیش آجائے تو حوت کا پلہ بھاری ہو جاتا ہے۔ بہرحال صرف ایک معاملہ ایسا ہے جس میں دونوں کے درمیان اختلاف پیدا ہو سکتا ہے اور وہ ہے مالی معاملہ۔ حوت کی سخی طبیعت، کھلے ہاتھ سے خرچ کرنے کی عادت عقرب کو ناگوار محسوس ہو سکتی ہے۔ حوت کو کل کی پروا نہیں ہوتی ہے، جب کہ عقرب مستقبل کے حوالے سے بہت فکرمند رہتا ہے۔ اس کے علاوہ دونوں کے درمیان کوئی تضاد موجود نہیں۔

حوت اور قوس کا ساتھ

یہ پانی اور آگ کا ساتھ ہے۔ دونوں میںمخالفت موجود ہے۔ علم نجوم کے قواعد کے مطابق بھیدونوں برج مخالف زاویہ نظر رکھتے ہیں۔ قوس شخصیت اپنے مثبت پہلوﺅں میں اصول پسند، نڈر اور صاف دل، آزاد رو، متجسس اور ذہین، کھلنڈرے پن کی طرف مائل ہوتی ہے، جب کہ اس کی منفی خصوصیات میں شیخی اور جارحیت، مبالغہ آرائی، بے تکا پن، بے اصولی اور اکھڑپن شامل ہے۔ حوت اور قوس کا باہمی اشتراک ہرگز مفید اور اطمینان بخش نہیں ہو سکتا۔ یہ دونوں شخصیات ایک دوسرے کی ضد ہیں، اس لیے ان کی شراکت پریشانی کا باعث بنی رہے گی۔ حوت کے ساتھ قوس کو اپنے مزاج پر قابو رکھنا پڑے گا، یہ ایک مشکل کام ہے۔ حوت بے حد حساس برج ہے۔ قوس کی حرکات اور عادات اس کے لیے سخت تکلیف دہ اور غصہ دلانے والی ہوں گی۔ حوت شخصیت کو توجہ اور خیال کی ضرورت ہوتی ہے، جب کہ قوس شخصیت اس معاملے میں کچھ بے پروا ہوتی ہے۔ اس کے پاس اپنے حوت ساتھی پر زیادہ توجہ دینے کی فرصت ہی نہیں ہوتی۔ ان دونوں میں صرف ایک قدر مشترک پائی جاتی ہے اور وہ ہے مذہب یا کسی نظریے سے لگن اور دل چسپی یا پھر حوت کو قوس کی اصول پرستی بہت اچھی لگتی ہے مگر قوس قدرتی طور پر ایک آزاد پنچھی ہے۔ حوت کا خود سے ہر وقت چمٹے رہنا وہ برداشت نہیں کر سکتا، چناں چہ دونوں کو ایک دوسرے سے شکایات پیدا ہونے لگیں گی، لہٰذا اس رشتے کی سفارش نہیں کی جا سکتی۔

حوت اور جدی کا ساتھ

حوت اور جدی پانی اور مٹی، دونوں عناصر باہم موافق ہیں۔ علم نجوم کے اصولوں کی روشنی میں موافق زاویہ نظر رکھتے ہیں۔ جدی شخصیت کی مثبت خصوصیات یہ ہیں: عملی اور کارگزار، معاون، باکردار، محنتی، منطقی، کم گو۔ اس کی منفی خصوصیات میں شک اور بدزنی، سردمہری اور خودغرضی، مزاحمت، یاسیت پسندی، ضد اور غیر جذباتی طرز عمل شامل ہیں۔ حوت اور جدی کا ساتھ کامیاب شراکتی یا ازدواجی زندگی کی نشان دہی کرتا ہے۔ جدی افراد کی مستقل مزاجی حوت کے لیے پسندیدہ ہے۔ وہ جدی کے ساتھ زیادہ اطمینان اور تحفظ محسوس کرتا ہے۔ اسی طرح جدی فرد اپنے حوت ساتھی کی معیت میں زیادہ سکون اور اطمینان محسوس کرے گا۔ حوت میں یہ اہلیت اور صلاحیت موجود ہے کہ وہ شرمیلی فطرت کے جدی کو زیادہ کھلنے میں مدد دے سکے۔ حوت کی تحمل مزاجی اور نرم دلی جدی کے لیے بے تکلفی کے مواقع فراہم کرتی ہے اور دیرپا، مستحکم تعلق اور دوستی کا سبب بنتی ہے، البتہ جدی شخصیت کو یہ احتیاط کرنا ہوگی کہ وہ اپنے حوت ساتھی پر سخت قسم کی حاکمانہ پابندیاں عائد نہ کرے، کیوں کہ حساس حوت انہیں برداشت نہیں کر سکے گا۔ بہرحال ان دونوں کی جوڑی کامیاب رہے گی۔

حوت اور دلو کا ساتھ

یہ پانی اور ہوا کا ساتھ ہے۔ دونوں عناصر کے درمیان کوئی تعلق خاطر نہیں۔ علم نجوم کے قواعد کے مطابق دونوں جڑواں ہیں، یعنی دلو حوت سے بارہویں نمبر پر ہے، لہٰذا دونوں میں کوئی اہم زاویہ نہیں بنتا۔ دلو شخصیت دیانت دار، ہر دل عزیز، نرم دل، سچائی کی متلاشی، وجدانی، موجدانہ ذہنیت کی حامل ہوتی ہے۔ اپنی منفی خصوصیات میں یہ متلون مزاج، سنکی، پل میں تولہ پل میں ماشہ، غیرروایتی اور عجیب رنگ ڈھنگ کی حامل ہوتی ہے۔ ایک حوت فرد کے لیے دلو شخصیت کی غیریقینی کیفیات ناقابل برداشت ہوں گی، کیوں کہ حوت شخصیت بے حد حساس اور نازک مزاج ہوتی ہے۔ ساتھ ہی وہ اپنے شریک حیات پر مکمل غلبہ یا قبضہ رکھنے کی متمنی ہوتی ہے، جب کہ خود دلو افراد آزادی کے خواہاں ہوتے ہیں اور اکثر دوسروں کی عائد کردہ پابندیوں سے بےزار رہتے ہیں۔ حوت فرد تنہائی پسند ہوتا ہے۔ ان دونوں کی مثال ایسی ہی ہے جیسے ایک شخص پانی کی گہرائی میں تیر رہا ہے اور دوسرا خلاﺅں میں چکراتا پھر رہا ہے۔ ہے نا عجیب سی جوڑی؟ ہاں اگر کوشش کی جائے اور ذرا ذرا سی تبدیلی دونوں اپنی عادات میں کرلیں تو دونوں اکٹھے مل کر بھی تیر سکتے ہیں یا خلاﺅں میں چکر لگا سکتے ہیں۔ بہرحال یہ کوئی آسان کام نہیں ہے۔ جہاں تک مالی معاملات کا تعلق ہے تو دونوں کی فطرت تقریباً یکساں ہے، یعنی بے فکری اور بے پروائی۔ حوت شخصیت کچھ رازدارانہ فطرت کی حامل ہوتی ہے اور یہ بات دلو کے لیے تکلیف دہ ہو سکتی ہے۔ وہ ہر بات جاننے کی خواہش رکھتا ہے، لہٰذا یہ برداشت نہیں کرے گا کہ اس سے کچھ چھپایا جائے، چناں چہ اس جوڑی کے فطری اور مزاجی اختلاف دونوں کی زندگی کو مشکل بنا دیں گے۔

حوت اور حوت کا ساتھ

دونوں ایک ہی عنصر سے تعلق رکھتے ہیں، یعنی پانی۔ دونوں کا باہمی اشتراک اگرچہ نہایت جذباتی وشاعرانہ نوعیت کا ہوتا ہے، کیوں کہ دونوں ہی ایک خیالی دنیا میںر ہتے ہیں اور ٹھوس مادی مسائل کو بھی اپنے احساسات کے ذریعے سمجھنے کی کوشش کرتے ہیں۔ اصل زمینی حقائق کیا ہیں، دونوں اس معاملے میں بے خبر رہتے ہیں۔ اگرچہ ان دونوں کو ایک دوسرے کی ضرورت ہوتی ہے مگر اپنی دہری شخصیت کے تضادات کی وجہ سے یا تو دوسرے کو بہت بلندی تک لے جاتے ہیں یا کسی پستی میں گرا دیتے ہیں۔ دونوں پیسے اور وقت کی بربادی کا بالکل خیال نہیں رکھ پاتے۔
حوت مرد اور حوت عورت کا ساتھ ایسا ہی ہے جیسے ایک اندھا دوسرے اندھے کی رہنمائی کر رہا ہو۔ درحقیقت دونوں ہی کو درست راستے کا علم نہیں ہوتا۔ ابتدا میں یہ دونوں باہمی طو رپر بہت کشش محسوس کرتے ہیں اور ان کا خیال ہوتا ہے کہ وہ بعد میں بہتر سمجھوتا کرلیں گے، ایک دوسرے کے جذبات کا احترام کریں گے لیکن بعد میں صورت حالات بالکل برعکس ہو جاتی ہے۔ دونوں اناگزیدہ بیٹھے یہ سوچ رہے ہوتے ہیں کہ ہم دونوں ایک دوسرے کے ساتھ کیوں ہیں۔ دراصل دونوں کا تعلق تو بہت پُرجوش ہے اور قریبی ہوتا ہے مگر دونوں کو جس طاقت ور سہارے کی ضرورت ہوتی ہے، وہ دونوں میں سے کسی کے پاس نہیں ہوتا۔ یہ جوڑی کبھی کبھی کامیاب بھی ہو جاتی ہے لیکن اگر ابتدا ہی میں آثار اچھے نظر نہ آئیں تو دونوں کو جلد راستے بدل لینے چاہئیں۔
[/c]
[/glow]