Author Topic: حالات ٹیم کو اکٹھا کر دیتے ہیں:شعیب  (Read 199 times)

0 Members and 1 Guest are viewing this topic.

Offline ahmed

  • Sr. Member
  • *
  • Posts: 1305
  • Reputation: 10
  • Gender: Male
    • Email


پاکستانی فاسٹ بولر شعیب اختر کہتے ہیں کہ پاکستانی کرکٹ ٹیم کو اگر کوئی چیز اکٹھی کرتی ہے تو وہ سچویشن اور حالات ہیں۔

کولمبو میں پاکستانی کرکٹ ٹیم کی پریکٹس کے بعد بی بی سی کو دیےگئے انٹرویو میں شعیب اختر کا کہنا تھا کہ میچ فکسنگ کے الزامات کے بعد ٹیم کے تمام سینئر کھلاڑیوں نے یہ ذمہ داری لی کہ وہ پاکستانی کرکٹ کو بچائیں گے اور ایسا کھیل کھیلیں گے کہ آنے والے نوجوانوں کے لیے یہ کرکٹ باقی رہ سکے۔

شعیب اختر نے کہا کہ اس ٹیم کو احساس ہے کہ وہ ایسی کارکردگی دکھا دے کہ پاکستان میں کرکٹ کا جنون اسی طرح واپس آجائے جیسے انیس سو بانوے ورلڈ کپ کے بعد پیدا ہوا تھا۔

انہوں نے کہا کہ ’تقریباً تمام ہی سینئر کھلاڑیوں کا یہ آخری ورلڈ کپ ہے اور وہ چاہتے ہیں کہ ایسی کرکٹ کھیل کر جائیں کہ قوم سب کرکٹرز کا شکریہ ادا کرسکے کہ انہوں نے کچھ کر دکھایا ہے اور ان کرکٹرز کو اچھے لفظوں میں یاد کر سکے‘۔

    تقریباً تمام ہی سینئر کھلاڑیوں کا یہ آخری ورلڈ کپ ہے اور وہ چاہتے ہیں کہ ایسی کرکٹ کھیل کر جائیں کہ قوم سب کرکٹرز کا شکریہ ادا کرسکے کہ انہوں نے کچھ کر دکھایا ہے اور ان کرکٹرز کو اچھے لفظوں میں یاد کر سکے۔

شعیب اختر

شعیب اختر نے کہا کہ شاہد آفریدی حقیقی معنوں میں میچ ونر ہیں جو اپنی کارکردگی سے ٹیم کے حوصلے بڑھارہے ہیں۔ وہ کپتانی بھی بہت اچھی کررہے ہیں انہیں حیرت ہے کہ ورلڈ کپ سے قبل آفریدی کی کپتانی کا معاملہ کیوں کھڑا کیا گیا۔

مہیلا جے وردھنے کی وکٹ کے بارے میں شعیب اختر نے کہا کہ اس سے یقیناً پاکستانی ٹیم کو میچ میں واپس آنے میں مدد ملی وہ ایک اہم سپیل تھا جو انہوں نے کیا لیکن اس کے بعد شاہد آفریدی نے غیرمعمولی کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔

شعیب اختر نے کہا کہ اب تک تو لوگ ان کے بارے میں اچھی طرح جان چکے ہیں کہ وہ کتنے محب وطن ہیں۔انہوں نے کبھی ستائش کی تمنا نہیں کی بلکہ ہر وقت ملک کے لیے کھیلے ہیں کیونکہ پاکستان ان کا جنون ہے۔ماضی میں وہ متعدد بار کاؤنٹیز کی پرکشش پیشکشیں پاکستان سے کھیلنے کے لئے ٹھکراچکے ہیں لیکن یہ ورلڈ کپ ان کے لیے بڑی اہمیت رکھتا ہے اور وہ اسے یادگار بنانا چاہتے ہیں۔

    میچ فکسنگ کے الزامات کے بعد ٹیم کے تمام سینئر کھلاڑیوں نے یہ ذمہ داری لی کہ وہ پاکستانی کرکٹ کو بچائیں گے اور ایسا کھیل کھیلیں گے کہ آنے والے نوجوانوں کے لیے یہ کرکٹ باقی رہ سکے۔

شعیب اختر

انہوں نے کہا کہ سری لنکا میں کنڈیشنز فاسٹ بولرز کے لئے مشکل ہیں وکٹیں سلو ہیں اور گیند بیٹ پراچھی آ رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ چونکہ ٹیم دو ریگولر فاسٹ بولرز کےساتھ کھیل رہی ہے لہذا کوئی بھی بولر خراب بولنگ کا متحمل نہیں ہوسکتا کیونکہ تیسرا فاسٹ بولر نہیں ہے جو ان کی جگہ بولنگ کے لئے آسکے۔

شعیب اختر نے ورلڈ کپ کے بعد ریٹائرمنٹ کو خارج ازامکان قراردیتے ہوئے کہا کہ ان میں اب بھی کرکٹ باقی ہے اور اس وقت بھی وہ ایک سو پچاس کلومیٹر کی رفتار سے بولنگ کرتے ہیں۔ جب انہوں نے محسوس کیا کہ وہ ٹیم پر بوجھ بن رہے ہیں تو کرکٹ چھوڑنے میں دیر نہیں لگائیں گے۔

وہ چاہتے ہیں کہ جتنی بھی کرکٹ کھیل سکیں عزت ووقار کے ساتھ کھیلیں ۔انہوں نے مستقبل کے بارے میں کوئی خاص منصوبہ بندی نہیں کر رکھی ہے۔


Pakistan Zindabad




Offline King

  • Sr. Member
  • *
  • Posts: 1652
  • Reputation: 4
  • Gender: Male
Re: حالات ٹیم کو اکٹھا کر دیتے ہیں:شعیب
« Reply #1 on: March 03, 2011, 03:56 AM »
thanks for sharing
 

Offline asad

  • Full Member
  • *
  • Posts: 414
  • Reputation: 0
    • Email
Re: حالات ٹیم کو اکٹھا کر دیتے ہیں:شعیب
« Reply #2 on: April 07, 2012, 12:45 AM »
old but thanks

Offline Allahwala

  • Sr. Member
  • *
  • Posts: 1337
  • Reputation: 6
  • Gender: Male
    • Email
nice