Author Topic: ’پرندے اپنے مُردوں کا سوگ مناتے ہیں‘  (Read 203 times)

0 Members and 1 Guest are viewing this topic.

Offline Farooq

  • Dilse Member
  • *
  • Posts: 553
  • Reputation: 0
    • Email
امریکہ میں کی گئی ایک تحقیق میں پتہ چلا ہے کہ کچھ پرندے اپنے مردوں کا سوگ مناتے ہیں اور آخری رسومات ادا کرتے ہیں۔

تحقیق میں یہ پایا گیا ہے کہ جب مغربی ممالک میں پائی جانے والی جیز نامی چھوٹی سی چڑیا کو کوئی مردہ پرندہ نظر آتا ہے تو وہ شور مچا کر ایک دوسرے کو اکٹھا کر لیتی ہیں اور دانے دنکے کی تلاش بند کر دیتی ہیں۔
اسی بارے میں

    پروں سے گانے والی چڑیا کا راز
    برسٹل کے تنہا زرافے کو ساتھی مل گیا
    ریما لاہور چڑیاگھر کی سفیر

متعلقہ عنوانات

    سائنس ,
    تحقیق

سائنسدانوں نے اپنی تحقیق میں یہ پایا ہے کہ یہ چڑیا عام طور پر مردہ پرندے کے پاس اترتی ہیں اور ان کے گرد جمع ہو جاتی ہیں گویا وہ انکا سوگ منا رہی ہوں۔

کیلی فورنیا کے تحقیق کرنے والوں نے اپنی اس دریافت کو سائنسی جریدے ’اینیمل بی ہیویئر‘ یعنی جانورں کے خصائل میں شائع کرایا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ان میں یہ خصلت ارد گرد موجود خطرات سے آگاہ کرنے کی ان کی عادت کے نتیجے میں پیدا ہوئی ہوگی۔

یہ باتیں ٹریزا اگلیسیاس اور ان کے ساتھیوں کے ذریعہ کی جانے والی تحقیق کے نتیجے میں سامنے آئی ہیں۔

انھوں نے اپنے رہائشی مکانات کے عقبی صحن میں طرح طرح کی چیزیں رکھیں اور یہ مشاہدہ کرنے کی کوشش کی کہ مغربی جیز کا ان کے تئیں کیا ردعمل ہے۔

ان چیزوں میں مختلف قسم کے لکڑی کے رنگین ٹکڑے، مردہ جیز، بھس بھری جیز اور پہاڑی الو شامل تھے جن سے شکاری پرندے اور جیز متوجہ ہوتے ہیں۔

مشاہدے میں یہ پایا گیا کہ جیز نے لکڑی کی چیزوں کو درخوراعتنا نہیں سمجھا لیکن جب انھوں نے کسی مردہ پرندے کو دیکھا تو انھوں نے شور مچانا شروع کر دیا گویا وہ دوسری چڑیوں کو دور رہنے کے لیے متنبہ کر رہی ہوں یا انھیں اس کے بارے میں کوئی اطلاع دے رہی ہوں۔

اس کے بعد جیز نے مردہ چڑیا کو گھیر لیا اور آوازیں نکالنے لگیں۔ اس کے بعد جیز نے خوراک کی تلاش بھی بند کر دی۔
مشاہدہ

    "مشاہدے میں یہ پایا گیا کہ جیز نے لکڑی کی چیزوں کو درخوراعتنا نہیں سمجھا لیکن جب انھوں نے کسی مردہ پرندے کو دیکھا تو انھوں نے شور مچانا شروع کر دیا گویا وہ دوسری چڑیوں کو دور رہنے کے لیے متنبہ کر رہی ہوں یا انھیں اس کے بارے میں کوئی اطلاع دے رہی ہوں"

تحقیق میں کہا گیا ہے کہ ان کے معمولات میں یہ تبدیلی ایک دن تک دیکھی جاتی ہے۔

اسی طرح تحقیق میں یہ بھی پایا گیا کہ جب ان کو یہ باور کرایا گیا کہ کوئی شکاری پرندہ ان کے آس پاس ہے تو بھی انھوں نے شور مچانا شروع کر دیا تھا۔

وہ متوقع شکاری پرندے پر جھپٹتی نظر آئیں لیکن وہ کسی مردہ پرندے پر کبھی نہیں جھپٹتیں۔

تحقیق کرنے والوں نے کہا کہ جیز جب کسی مردہ پرندے کو دیکھتی ہیں تو وہ اس کی خبر دوسرے پرندوں کو دینا ضروری سمجھتی ہیں جیسا کہ شکاری پرندوں کی موجودگي میں عام طور پر وہ ایسا کرتی ہیں کہ دوسرے پرندوں کو آگاہ کر دیتی ہیں۔

دوسرے جانور بھی اپنے مردوں کا نوٹس لیتے ہیں مثال کے طور پر زرافے اور ہاتھی کو دیکھا گیا ہے کہ وہ اپنے قریبی رشتہ دار کے تازہ مردہ جسم کے گرد چکر کاٹتے ہیں جس سے یہ اندازہ ہوتا ہے کہ ان میں موت کا نظریہ موجود ہے اور وہ اپنے مردوں کا سوگ بھی مناتے ہیں۔

Offline asad

  • Full Member
  • *
  • Posts: 414
  • Reputation: 0
    • Email
Re: ’پرندے اپنے مُردوں کا سوگ مناتے ہیں‘
« Reply #1 on: September 04, 2012, 01:40 PM »
hmm very nice info. thanks

Offline anjumkhan

  • Sr. Member
  • *
  • Posts: 1624
  • Reputation: 1664
  • Gender: Female
    • Email
Re: ’پرندے اپنے مُردوں کا سوگ مناتے ہیں‘
« Reply #2 on: September 06, 2012, 11:23 AM »
 bohatshukria

Bhlay Cheen lo muj sy meri jawani.
Mager muj ko lota do Bajpan ka sawan.
Wo kaghaz ki kashti wo barish ka pani.